.... How to Find Your Subject Study Group & Join ....   .... Find Your Subject Study Group & Join ....  

We are here with you hands in hands to facilitate your learning & don't appreciate the idea of copying or replicating solutions. Read More>>

Study Groups By Subject code Wise (Click Below on your university link & Join Your Subject Group)

[ + VU Study Groups Subject Code Wise ]  [ + COMSATS Virtual Campus Study Groups Subject Code Wise ]

Looking For Something at vustudents.ning.com?Search Here

ہم اس خدا کی پوجا کر رہے ہیں جو ہمیں اپنے اجداد سے ملا ہے

تم دیوبندی ہو........!!
کیونکہ تم نے ایک سکہ بند دیوبندی گھرانے میں جنم لیا.

تم بریلوی ہو........!!
کیونکہ تم نے آنکھ کھولی تو گھر میں میلاد کی محفل برپا تھی.

تم شیعہ ہو........!!
کیونکہ تم نے آنکھ کھولی تو پنجتن پاک، شہدائے کربلا اور بارہ امام ہی دیکھنے کو میسر تھے.

پھر ہوا یوں کہ..........!!

تم میں کا ہر ایک ٹھیک ٹھہرا. 
باقی تین کافر ہوگئے. 
حور و غلمان کے کاپی رائٹس آپ کے نام. بہشت بریں کی سب رستوں گلیوں پہ آپ کا قبضہ.

شیعہ میری جان.......!!
تم سنی گھرانے میں اگر پیدا کر دیئے جاتے، تو کیا تم سنی نہ ہوتے؟

سنی میرے بھائی........!!
تم اگر شیعہ گھرانے میں آنکھ کھولتے تو کیا تم شیعہ نہ ہوتے.......؟؟

"ظاہر ہے، باپ کے بدل جانے سے عقیدہ بھی بدل جائے گا" کیوں.............؟؟؟؟؟

کیونکہ...............!!!

تمہارے عقیدوں کے ٹھیک ہونے کی دلیل اس کے سوا کوئی نہیں کہ تم نے اپنے اجداد کو اس راہ پہ پایا.

دل پہ ہاتھ رکھ کر بتاو...................!!!
تمہارے شیعہ سنی ہونے میں تمہارے فہم و ادراک کو کتنا دخل ہے. 
کیا تمہارا کسی مسلک سے وابستہ ہونا ایک اتفاقی حادثہ نہیں ہے...............؟؟؟

سوچیئے..................!!!
آپ اگر اجداد سے ملنے والے عقیدے پہ مطمئن ہیں، 
تو آپ کا حریف کیوں نہ ہو.
اجداد تو اسے بھی عزیز ہیں نا صاحب.

دوسری بات...............!!

اجداد سے ملنے والے عقیدے پہ چلنا اگر حریف کا جرم ٹھہرا تو کسی عقیدے سے آپ کی وابستگی میں آپ کا کیا کمال ہوا............؟؟؟

تو پھربتلائیں...............!!!!
خود کے جنتی ہونے کا یہ یقین کیسا. دوسروں کے جہنمی ہونے پہ اصرار کیسا............؟؟؟؟
پھر یہ قتل عام..............؟؟؟ 
پھر یہ جبر وتشدد................؟؟؟

سچ یہ ہے کہ.........!!
ہم اس خدا کی پوجا کر رہے ہیں جو ہمیں اپنے اجداد سے ملا ہے. 
کبھی بسم اللہ کے گنبد سے دو قدم باہر نکل کر اپنا خدا بھی تلاشیئے. 
اپنے فہم و شعور پہ اتنا ہی اگر مان ہے تو پھر آسمان در آسمان اسرار کی پرتیں ہٹاکر جھانکنے کی ہمت کیجیئے. 
سنیں............!!!!
اجداد کے روایتی ورثے پہ تقلید کے کسی شیش ناگ کی طرح جمود کا پھن پھیلا کر بیٹھ جانے کو علمی دیانت نہیں کہتے.
آپ جانتے ہی ہیں

"ستاروں سے آگے جہاں اور بھی ہیں"

آئیے کبھی قرآن و حدیث کا مطالعه بھی کیجیے .......!!!!

Share This With Friends......


How to Find Your Subject Study Group & Join.

Find Your Subject Study Group & Join.

+ Click Here To Join also Our facebook study Group.


This Content Originally Published by a member of VU Students.

+ Prohibited Content On Site + Report a violation + Report an Issue


Views: 501

See Your Saved Posts Timeline

Reply to This

Replies to This Discussion

(Y)

nice

..بالکل درست،بہترین تجزیہ

hmmm

کبھی بسم اللہ کے گنبد سے دو قدم باہر نکل کر اپنا خدا بھی تلاشیئے

بہترین

g g

Hmara education system bachon ki Zehni namoo krny sy qasir hy. Ancestors k Deen ki baat tekh hy wo b apny ancestors ko follow krty arahy hyn lakin is sb ko bdlna taleem ki responsibility hy. Dosri tarf hmary deeni madaris hyn jo is ki sb sy bari waja hyn ,Jahn bachon ko zabrdasti apny firqy ki taleem di jati hy oor na samj bachy k masoom zehn may wo baatin ksi unmit aaqeedy ki tarah sabt ho jati hyn. Ap ksi Baralvi gharany may peida hony waly bachy ko Deoband madrsy may taleem dilwa kr dykh llyn wo Deoband bn jaye ga YA Deoband bachy ko Baralvi madrsy may baijny sy wo Baralvi bn jaye ga. Harf-e- Akir ki bajye Ijtihaad pr zor dyna chahye phir hi ye firqa parsti ktm ho gi………aik oor important baat DEEN ki samj tb tk ni ati jb tk ksi may samjny ka tajassus na ho…..jb tk hm bachon ko zabrdasti band kr DEEN sikhyn gyn firqa parsti hi barhy gi……… un ko DEEN sikhany k sath DEEN ko samjny ka shoqq o shaour paida kia jaye

ap b itni lmbi lmbi baten kr leti hain

ھمارے پیدا ھوتے ھی ھمارے والدین اور معاشرہ ھمیں ایک نام، زبان، ذات، نسل، مذھب اور علاقے کی  پہچان سے نوازتے ھیں اور آنے والی پوری زندگی ھم ان مستعار دی گئ (افسانوی) شناختوں، جو بغیر کسی معلوم خواہش کے میسر ھوتی ھیں، کو برتر ثابت کرنے میں گزار دیتے ھیں - یہ مایوس کن ھے - کہیں ایسا تو نہیں کہ ھم صرف اپنی ذات کی تشہیر چاھتے ھوے پوری زندگی شناخت کی جنگ لڑتےھوے گزار دیتے ھوں اور اوپر دیے ھوے لوازمات کو ذاتی نمود کے لیے "استعمال" کرتے ھوں؟ اگر ایسا ھے تو یہ نہایت خطرناک ھے

achaa :O

RSS

Forum Categorizes

Job's & Careers (Latest Jobs)

Admissions (Latest Admissons)

Scholarship (Latest Scholarships)

Internship (Latest Internships)

VU Study

Other Universities/Colleges/Schools Help

    ::::::::::: More Categorizes :::::::::::

Today Top Members 

Member of The Month

© 2017   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service