.... How to Find Your Subject Study Group & Join ....   .... Find Your Subject Study Group & Join ....  

We are here with you hands in hands to facilitate your learning & don't appreciate the idea of copying or replicating solutions. Read More>>

Study Groups By Subject code Wise (Click Below on your university link & Join Your Subject Group)

[ + VU Study Groups Subject Code Wise ]  [ + COMSATS Virtual Campus Study Groups Subject Code Wise ]

Looking For Something at vustudents.ning.com?Search Here

رمضان المبارک میں صحت کی دولت کیسے پائیں؟

برکات و اکرام کا مقدس مہینا، رمضان المبارک اپنی پوری آب و تاب سے جاری ہے۔ ایک عاقل نے کیا خوب کہا ہے: ’’اپنی زندگی رمضان کریم کے ہر دن کی طرح گزاریئے۔ یوں آخرت کا وقت آپ کے لیے یومِ عید بن جائے گا۔‘‘

کھجور سے ناتا جوڑیئے
سحری اور افطار میں رواے داروں کے سامنے رنگ برنگ کھانوں کا ڈھیر لگا ہوتا ہے۔ اشتہا انگیز غذائیں دیکھ کر بہت سے مردوزن خود پر قابو نہیں رکھ پاتے اور الم غلم اشیا سے پیٹ بھرلیتے ہیں۔ انہیں احساس ہی نہیں ہوتا کہ وہ مضر صحت غذائیں بڑی تعداد میں چٹ کرجاتے ہیں۔ماہرین غذائیات کا کہنا ہے کہ سحرو افطار میں کھجور ضرور کھائیے۔ یہ بہترین پھل بڑی تعداد میں کاربوہائیڈریٹ، ریشہ (فائبر)، شکر اور پوٹاشیم رکھتا ہے۔ چناںچہ روزے کے طویل دور میں جسم کو اس پھل سے مسلسل توانائی ملتی رہتی ہے۔ کھجور بھوک ختم کرتا اور ہاضمہ بہتر بناتا ہے۔ اس میں چکنائی موجود نہیں ہوتی اور نہ کولیسٹرول ملتا ہے۔ کھجور میگنیشیم اور وٹامن بی۔6 کا بھی عمدہ ذریعہ ہے۔

پانی پینا مت بھولیے
آج کل یہ رواج بن چکا کہ سحر و افطار، دونوں مواقع پر ہمہ قسم کے مشروبات نوش کیے جاتے ہیں۔ عام طور پہ دسترخوان پر پانی کہیں نظر نہیں آتا۔ یہ مشروبات چینی اور کیمیائی مادوں کے حامل ہوتے اور انسان کو فربہ کرتے ہیں۔ پانی ان سے کہیں بہتر قدرتی مشروب ہے۔ افسوس کہ روزے داروں کی اکثریت خصوصاً افطاری کے وقت عموماً پانی سے اجتناب برتتی ہے۔

افطاری میں جلد بازی نہ کیجیے
ہمارے ہاں یہ چلن بھی جنم لے چکا کہ افطاری کے موقع پر پکوڑے، سموسے، کچوریاں، چپس وغیرہ ضرور موجود ہوں اور لوگوں کی اکثریت انہیں کھا کر ہی روزہ افطار کرتی ہے۔ یہ مضر صحت رواج ہے۔

ماہرین غذائیات کے مطابق روزے میں افطاری ہی سب سے اہم وقت ہے۔ تب پچھلے پندرہ گھنٹے سے جسم حالتِ آرام میں ہوتا ہے۔ اس کیفیت میں پیٹ سکڑ جاتا ہے اور آنتیں بھی متحرک نہیں رہتیں۔ ایسی حالت میں نہایت ضروی ہے کہ ٹھوس غذا رفتہ رفتہ نظام ہضم میں داخل کی جائے۔ اگر افطاری میں انسان پیٹ سموسوں، پکوڑوں وغیرہ سے بھرلے، تو نہ صرف نظام ہضم خراب ہوتا ہے بلکہ گردوں جیسے اہم اعضا کو بھی نقصان پہنچ سکتا ہے۔

Share This With Friends......


How to Find Your Subject Study Group & Join.

Find Your Subject Study Group & Join.

+ Click Here To Join also Our facebook study Group.


This Content Originally Published by a member of VU Students.

+ Prohibited Content On Site + Report a violation + Report an Issue

+ Safety Guidelines for New + Site FAQ & Rules + Safety Matters

+ Important for All Members Take a Look + Online Safety


Views: 68

See Your Saved Posts Timeline

Comment

You need to be a member of Virtual University of Pakistan to add comments!

Join Virtual University of Pakistan

Forum Categorizes

Job's & Careers (Latest Jobs)

Admissions (Latest Admissons)

Scholarship (Latest Scholarships)

Internship (Latest Internships)

VU Study

Other Universities/Colleges/Schools Help

    ::::::::::: More Categorizes :::::::::::

Member of The Month

© 2018   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service