.... How to Find Your Subject Study Group & Join ....   .... Find Your Subject Study Group & Join ....  

We are here with you hands in hands to facilitate your learning & don't appreciate the idea of copying or replicating solutions. Read More>>

Study Groups By Subject code Wise (Click Below on your university link & Join Your Subject Group)

[ + VU Study Groups Subject Code Wise ]  [ + COMSATS Virtual Campus Study Groups Subject Code Wise ]

Looking For Something at vustudents.ning.com?Search Here

Saaf E Nazuk Kon?.....صنفِ نازک کون؟روایتی اظہار محبت کرنے والا مرد یا عورت

جب سے نوکری شروع کی تھی اسے ہمیشہ اپنے ساتھ والی میز پر ہشاش بشاش مزاج میں بیٹھے دیکھا تھا، مجال ہے کہ کبھی اس کی پیشانی پر کسی پریشانی کی شکن تک دیکھی ہو اور مجھے ہر عام انسان کی طرح زندگی سے ہزاروں شکوے ہوتے جو میں اسے سناتی رہتی تھی۔ وہ اپنی مخصوص زندہ دل لہجہ میں تسلی دیتی ہوئی کہتی کہ یہ سب عارضی پریشانیاں ہیں اور ان کے پیچھے زندگی جیسی خوبصورت نعمت کو کیوں ضائع کرنا؟ میں ہر بار اس کی باتیں سن کر یہی سوچتی رہ جاتی کہ عام انسان اتنا پرسکون کیسے ہوسکتا ہے ؟ ایسا کیسے ہوسکتا کہ اس کی زندگی میں کوئی پریشانی نہ ہو؟

اس کا پرسکون اور مسکراتا چہرہ دیکھ کر یہ ساری سوچیں جھٹک دیتی اور حسرت کرتی اس کے جیسی زندگی کیلئے، لیکن یہ بھی تو حقیقت ہی ہے کہ جو آنکھوں کے سامنے ہو وہ ہمیشہ سچ نہیں ہوتا۔ مجھے یاد ہے وہ جمعہ کا روز تھا اور آفس میں کام کرنے والے سارے مرد حضرات نمازِ جمعہ کی ادائیگی کیلئے جاچکے تھے۔ وہ بھی نماز ظہر کیلئے نماز کیلئے مختص کمرہ میں چلی گئی، میں انتظار کرنے لگی کہ وہ آئے تو پھر میں بھی نماز ادا کرنے جاؤں، لیکن کافی وقت گزر جانے کے بعد وہ واپس نہ لوٹی تو مجھے تشویش ہوئی تو میں نے خود جاکر اسے دیکھنے کا سوچا۔

جب میں کمرے میں داخل ہوئی تو اسے سجدے میں جھکے زارو قطار روتے دیکھا۔ اس کے لب پر کوئی دعا جاری تھی جس کے لفظ رونے کی آواز میں ٹھیک سے سنائی نہ دے رہے تھے۔ مجھے اسے ایسی حالت میں دیکھ کر تشویش ہوئی اور اسے ہِلایا۔ وہ سجدے سے اٹھی اور میرے گلے لگ کر رونے لگی۔ میرے بار بار پوچھنے پر آخرکار اس نے بولنا شروع کیا ، اور کہا کہ میں اپنے اللہ کو راضی کر رہی تھی لیکن وہ راضی نہیں رہا۔ ہو بھی کیسے؟ میں گناہ ہی ایسا کیا ہے۔ جانتی ہو اس گناہ کا نام کیا ہے؟ پھر خود ہی نم آواز میں جواب دیتے ہوئے کہا، ’’محبت‘‘ میں نے اپنے اللہ کی محبت میں ایک نامحرم کو شریک کیا ہے۔ میں نے ایسے شخص سے محبت کی جسے یونیورسٹی کے پہلے دن سے مجھ سے محبت کا دعویٰ تھا۔

سختی برتتے ہوئے میں نے اپنے دل کو ایک ایسا مضبوط قلعہ بنائے رکھا جس کے گرد اتنی اونچی دیواریں تھیں کہ کوئی چاہ کر بھی داخل نہ ہوسکے، لیکن سچ کہتے ہیں کہ دیواریں جتنی بھی اونچی اور مضبوط کیوں نہ ہوں جب ان کے گرنے کا وقت کا آتا ہے تو ہوا کا ایک ہلکا سا جھونکا ہی کافی ہوتا ہے۔ ایسا ہی ہوا میرے ساتھ ، اس شخص کی محبت کی دستک مسلسل پانچ سال تک میرے دل کی دیواروں کو نہ گراسکی مگر ایک روز صرف ہلکی سی دستک نے ساری دیواروں کو ڈھادیا اور میں اس سے اظہار کربیٹھی اور اس سوچ کے ساتھ دونوں رابطہ میں رہے کہ جب اللہ نے چاہا تو گھر والوں سے بات کرلیں گیں۔

وہ بھی تو ایک روایتی مرد ہی کی طرح نکلا جو مجبوریوں میں اس حد تک گھرا ہوا تھا کہ ہماری محبت کو حلال رشتے کا نام دینے کے کبھی قابل ہی نہ ہوسکا۔ ایک بار پھر ایک روایتی مرد عورت سے اظہار سن کر خود تو آزاد ہوچکا تھا مگر عورت کو ہمیشہ کیلئے قید کر گیا۔ ہر والدین کی طرح جب مجھ سے میرے ماں باپ میرا بسا ہوا گھر دیکھنے کی خواہش کا اظہار کرتے تو میرا ہر بار کا انکار انہیں مایوس کرتا ہے۔ اس کے سوا میں کروں بھی  تو آخر کیا؟ ایک بٹی ہوئی عورت نہیں بننے دے سکتی خود کو، ایک ایسی عورت جس کے دل میں کوئی، اور زندگی میں کوئی اور ہمسفر ہو۔ یہ تو دھوکہ کی زندگی جینا ہوا، اب ہر روز یہ احساس مجھے بےچین کئے رکھتا ہے کہ آخر یہ سب کرکے مجھے ملا ہی کیا؟

نہ تو وہ شخص میری دسترس میں آسکتا ہے، جس کے لئے میں اپنے گھر والوں کے اندھے اعتبار کا خون کیا، اور اللہ بھی مجھ سے ناراض ہوگیا، سکون میری زندگی سےعلیحدہٰ گیا۔ اس ساری بے چینی سے نکلنے کیلئے میں اپنی زندگی کو بہت مصروف کرچکی ہوں۔ گھر والوں سے دور انجان شہر میں اکیلی رہ رہی ہوں۔ صبح نوکری پر آتی ہوں، اور مزید تعلیم کا سلسلہ بھی جاری رکھا ہوا جس کیلئے شام میں اکیڈمی جاتی ہوں اور رات کو کتابوں کو ساتھی بنایا ہوا ہے۔ بے چینی جب حد سے بڑھ جاتی ہے اور کوئی ہم نوا نہیں پاتی تو ایسے ہی اپنے اللہ کے سامنے سربسجود ہو جاتی اور ایک ہی التجا کرتی کہ اے اللہ! یا تو دل کو اپنی رضا میں راضی کر کے صبر کرنا سِکھا، یا دل کی آرزو پوری کرکے اسے سکون دے، لیکن سکون ہے کہ مجھے ملتا ہی نہیں۔

اس  نے اچانک ٹرانس کی کیفیت میں بولنا شروع کیا، میں نےعشق حقیقی کو چھوڑ کر عشق مجازی کیلئے سفر طے کیا اور ایسا سفر کرنے والوں کو منزل بھلا کب ملا کرتی ہے؟ وہ ایسے ہی دربدر پھرتے میری طرح۔۔۔۔۔ یہ سب سنا کر وہ بالکل خاموش ہوچکی تھی۔ بظاہر تو عام سی داستان تھی اس کی مگر اسے سن کر کچھ تلخ حقیقتیں میرے ذہن کے پردے پہ جھلملانے لگیں۔ ٹھیک ہی تو کہتے ہیں کہ ضروری نہیں مسکراتے چہرے خوشحال بھی ہوں۔ کسی انسان کی زندگی کی کشتی کتنے گہرے طوفانوں سے گزر رہی ہے، اس کا ادراک کوئی اور شخص کبھی نہیں کرسکتا۔ اکثر بہت سے مسکراتے چہرے دل ہی دل میں دکھوں کی ایک تیز آندھی میں گھِرے ہوتے ہیں، اور ہنسی کا مصنوعی لبادہ اوڑھے رکھتے ہیں۔ کہتے ہیں کے ہستے چہرے کے پیچہے چھپے دکھ/غم / زخم بہت گھرے ہوا کرتے ہیں۔

آخر ہوتے تو وہ بھی عام کمزور انسان ہی ہیں، ان کے بھی ضبط کا بندھن ایک روز ٹوٹ جاتا ہے، اور آج ایسے ہی اس کا ضبط اس کا ساتھ چھوڑ چکا تھا۔ سوال یہ ہے کہ صنف نازک اصل میں ہے کون؟ عورت یا مرد؟  کمزورانسان جو دوسرے انسان کے  دل میں محبت پیدا کر کے اسے کسی اور کیلئے چھوڑ جائے۔ ایسا انسان محبت کرتا ہی کیوں ہے؟ جسے مجبوریوں میں جکڑے ہونے کا احساس بعد میں ہونا ہوتا ہے۔ محبت کا پھول ایسے ہی انسان کے دل میں کیوں کھلتا ہے؟ جو مجبوریوں کے خاردار جنگلوں میں گھرا ہوتا ہے۔

link

This Content Originally Published by a member of VU Students.

Views: 102

See Your Saved Posts Timeline

Comment

You need to be a member of Virtual University of Pakistan to add comments!

Join Virtual University of Pakistan

Forum Categorizes

Job's & Careers (Latest Jobs)

Admissions (Latest Admissons)

Scholarship (Latest Scholarships)

Internship (Latest Internships)

VU Study

Other Universities/Colleges/Schools Help

    ::::::::::: More Categorizes :::::::::::

Latest Activity

Umar Farooq Xipra liked Noghman Khokhar's discussion Assignment No.3 Semester Spring 2017 Information System– CS507 Due Date: 25/07/2017 Tuesday
12 minutes ago
Awara Pagal Dewana liked zahid usman's discussion MGT601 Assignment no 1 Due date : 20 july 2017 Marks : 20
41 minutes ago
RAEES posted a discussion
52 minutes ago
+ ❤❤sεηsιι(ℓαℓαנ's ρяιηcεss)❤❤ posted discussions
54 minutes ago
+ ❤❤sεηsιι(ℓαℓαנ's ρяιηcεss)❤❤ liked + Ali's discussion Report Us !! about Abusing In Chat, Advertising, Bad Words, Spam
1 hour ago
+ ❤❤sεηsιι(ℓαℓαנ's ρяιηcεss)❤❤ liked HaPpY cнαη∂α (✿◠‿◠)(◉‿◉✿)'s discussion meri flooder sisters kaha hy :( koi online b hy k ni :'(
1 hour ago
+ ❤❤sεηsιι(ℓαℓαנ's ρяιηcεss)❤❤ liked + "αяsαℓ "๓๏ภรtєг"'s discussion Any Genius!!! to solve this riddle........
1 hour ago
SyedZadi replied to Rio Leo's discussion Assignment No.3 (Due Date 20-July-2017) CS401 - Computer Architecture and Assembly Language Programming in the group CS401 Computer Architecture and Assembly Language Programming
1 hour ago
+ Nayab liked + "αяsαℓ "๓๏ภรtєг"'s discussion One year B.ed Program...
1 hour ago
+ Nayab liked + Sir G❤'s discussion پسند کی شادی یا گھر والوں کی مرضی کی ؟؟؟؟؟؟ اک خوبصوت جواب۔۔۔۔ آپ کیا کہتے ہیں؟؟؟؟
1 hour ago
+ Nayab liked + ansa's discussion *~~~Shikwaaaa~~~*
1 hour ago
+ Nayab liked kitkat's discussion PAK301 Assignment No.2
1 hour ago

Today Top Members 

Member of The Month

1. + ansa

rwp, Pakistan

© 2017   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service