سنو! جو مسکراتے ہیں، انہیں بھی روگ ہوتے ہیں

سنو! جو مسکراتے ہیں، انہیں بھی روگ ہوتے ہیں
بہت مجبور ہوتے ہیں
راتیں جاگتی انکی، دعاؤں میں گزرتی ہیں
نگاہیں بھیگتی ہیں اور پلکیں بھی لرزتی ہیں
نہ ماضی بھولتا ان کو نہ کوئی آس ہوتی ہے
فقط اک پیاس ہوتی ہے
جو جینے بھی نہیں دیتی
جو مرنے بھی نہیں دیتی
اذیت آگ کی صورت دلوں میں ہی سلگتی ہے
یہ شدت اور بڑھتی ہے یہ شدت اور بڑھتی ہے
سنو!
جو مسکراتے ہیں

انہیں بھی روگ ہوتے ہیں۔

Views: 788

Reply to This

Replies to This Discussion

send kr dyo 

well said...... 

thnxx 

nice 

thnxx

thnxx 

Heart touchable

 hmmm 

Great lines..but sad..

thnxx 

RSS

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service