.... How to Find Your Subject Study Group & Join ....   .... Find Your Subject Study Group & Join ....  

We are here with you hands in hands to facilitate your learning & don't appreciate the idea of copying or replicating solutions. Read More>>

Study Groups By Subject code Wise (Click Below on your university link & Join Your Subject Group)

[ + VU Study Groups Subject Code Wise ]  [ + COMSATS Virtual Campus Study Groups Subject Code Wise ]

Looking For Something at vustudents.ning.com?Search Here

!!...مجھ سے یہ نہیں ہوگا..... باخدا نہیں ہوگا

اب تو باز آجائو
یاسیت نہ پھیلائو

زیست خوبصورت ہے
صبح کتنی روشن ہے
چاند کتنا اچھا ہے
رات کتنی پیاری ہے

تم جو مجھ سے کہتی ہو
!!کتنا جھوٹ کہتی ہو

کیسے نہ لکھوں جاناں

وقت کے مصائب سب
جبر کے مراحل سب
امن، جنگ کے قصے

ذات، رنگ کے قصے

کیسے لوگ بٹتے ہیں

کیسے دین بکتے ہیں


کیسے روح سسکتی ہے
کیسے جاں نکلتی ہے
کیسے بھوک پلتی ہے

 کیسے نہ لکھوں یہ میں؟؟؟
چپ رہوں تو کیونکر میں؟؟؟ 

تم جو مجھ سے کہتی ہو

آج کے زمانے میں
شعر میں، فسانے میں
کوئی سچ نہیں سنتا
کوئی سچ نہیں لکھتا
سب ہی جھوٹ بکتے ہیں
سب ہی جھوٹ لکھتے ہیں
تم بھی جھوٹ لکھ ڈالو

تم جو مجھ سے کہتی ہو

جھیل جیسی آنکھیں وہ
مرمریں سا آہنگ وہ
شبنمی سا آنچل وہ
زلف جیسے بادل وہ
گال مثلِ خوباں سے
چال ۔۔ بھاڑ میں جائے

مجھ سے یہ نہیں ہوگا
!!! باخدا نہیں ہوگا

 روز جس کے آنگن میں
بھوک گشت کرتی ہے
روز جس کی گلیوں میں
موت رقص کرتی ہے
جس کے شہر میں ہر سو
بےحسی جھلکتی ہے
خون کیوں نہ تھوکے وہ؟
بال کیوں نہ نوچے وہ؟
چیخ کیوں نہ مارے وہ؟

چپ وہ رہے کیونکر ؟ 
جھوٹ وہ لکھے کیونکر؟ 

 

This Content Originally Published by a member of VU Students.

Views: 205

See Your Saved Posts Timeline

Reply to This

Replies to This Discussion

Welcome to Urdu Poetry!

خوب ہے کیا خود لکھی ہے۔

bht shukria..

no, its not written by me.

بہت خوب۔  

روز جس کے آنگن میں
بھوک گشت کرتی ہے
روز جس کی گلیوں میں
موت رقص کرتی ہے

heart touching ....

مجھ سے یہ نہیں ہوگا
!!! باخدا نہیں ہوگا

مجھ سے ملیئے میں ایک شاعر ہوں!!!

میری نظموں میں چوڑیوں کی کھنک

میرے گیتوں میں پایلوں کی چھنک

میری غزلوں میں کنگنوں کا بیاں

میرے دوہوں میں آنچلوں کا ذکر
میں نے چاہا ۔۔۔ مگر میں لا نہ سکا!!!

 

میری نظمیں تھیں جاگتی نظمیں

میری نظمیں تھیں زندگی کا بیاں

 

میرے نغموں میں زیست بوجھ بنی

میرے گیتوں میں سانس روگ بنی

میری غزلیں تھیں حسرتوں کی کسک
میرے دوہوں میں خون تھوکا گیا

 

x——————x——————x

 

میں نے چاہا کہ میں بھی وہ لکھوں

جس طرح اور لوگ لکھتے ہیں

وصل و چاہت کے شوخ افسانے

ہجر کے دردخیز افسانے

میں نے چاہا ۔۔۔ مگر میں لکھ نہ سکا!!!

 

میرے موضوع شروع سے ہیں انساں

کاروبارِ سیاستِ دوراں

بھوکے بچوں کی موت اور انساں

 

اب مگر سوچتا ہوں جانے کیوں؟

اتنا بے ربط سوچتا ہوں کیوں؟

میرے دکھ سب سے مختلف ہیں کیوں؟

nice

Superb

yup tnx dear , yeh post jinki hy wo b superb thi 

RSS

Job's & Careers (Latest Jobs)

Admissions (Latest Admissons)

Scholarship (Latest Scholarships)

Internship (Latest Internships)

VU Study

Other Universities/Colleges/Schools Help

+ More Categorizes

© 2017   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service