We are here with you hands in hands to facilitate your learning & don't appreciate the idea of copying or replicating solutions. Read More>>

Looking For Something at vustudents.ning.com? Click Here to Search

www.bit.ly/vucodes

+ Link For Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution

www.bit.ly/papersvu

+ Link For Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More


Dear Students! Share your Assignments / GDBs / Quizzes files as you receive in your LMS, So it can be discussed/solved timely. Add Discussion

How to Add New Discussion in Study Group ? Step By Step Guide Click Here.

انسان ہر دور میں نشہ کرتے آئے ہیں۔ نشہ انسان کو وقتی طور پر مزہ یا سرور دیتا ہے اور اسے زندگی کے تلخ حقائق سے دور کردیتا ہے۔ تاہم یہ نشہ مستقل بنیادوں پر کبھی سکون نہیں دے سکتا بلکہ نشے کا عادی ہونے کے بعد لوگوں میں نشے کی طلب بڑھتی چلی جاتی ہے اور اس کا سرور کم سے کم ہوتا چلا جاتا ہے۔ یہاں تک کہ ایک وقت ایسا آجاتا ہے جب لوگ مزے کے بجائے مجبوری میں نشہ کرتے ہیں۔ اور طرح طرح کے عوارض اور مسائل کا شکار ہوجاتے ہیں۔

انسان اپنی تاریخ میں ناک اور زبان کے راستے ہی نشہ سے واقف رہے ہیں جیسے ہیروئن یا شراب وغیرہ۔ مگر اکیسویں صدی میں نشے کی ایک نئی قسم ا یجاد ہوئی ہے جو آنکھوں کے راستے انسانوں کے اندر اترجاتی ہے۔ یہ نشہ انفارمیشن ا یج کے آلات سے ملنے والی تفریح کا نشہ ہے۔ ٹی وی، فلمیں، ڈرامے، کھیل، وڈیو گیم، انٹرنیٹ، فیس بک، چیٹنگ وغیرہ اس نشے کی نمایاں ترین مثالیں ہیں۔ اکیسویں صدی کا ہر فرد کم یا زیادہ اس نشے کا شکار ہے۔

لوگ اس نشے کے بھی اسی طرح عادی ہوجاتے ہیں جیسے شراب اور چرس کا نشہ ہوتا ہے۔ ان چیزوں کے بغیر ان کے شب و روز اور صبح و شام نہیں کٹتے۔اس کے نتیجے میں  بچے تعلیم سے، خواتین گھرہستی سے اور مرد ذمہ داریوں سے بے نیاز ہوجاتے ہیں۔ لوگ ایک گھر میں رہ کر ایک دوسرے سے بے خبر رہتے ہیں۔ دوست احباب اور رشتہ داروں سے ملنے کا وقت نہیں رہتا۔ وقت کا زیاں، ذہنی صلاحیت کا مفلوج ہونا اور اخلاقی اقدار کی کمزوری اس کے عام نتائج ہیں۔ یہ فرد اور معاشرے دونوں کو ایسے ہی نقصان پہنچاتا ہے جیسا کوئی اور نشہ۔

مگر بدقسمتی سے کوئی اس نشے کو نشہ نہیں مانتا۔ کوئی خود کو اور  اپنے بچوں کو اس نشے سے بچانے کی کوشش نہیں کرتا۔ یہاں تک کہ یہ نشہ انہیں سکون سے مستقل طور پر محروم کردیتا ہے۔

ابویحییٰ

+ How to Follow the New Added Discussions at Your Mail Address?

+ How to Join Subject Study Groups & Get Helping Material?

+ How to become Top Reputation, Angels, Intellectual, Featured Members & Moderators?

+ VU Students Reserves The Right to Delete Your Profile, If?


See Your Saved Posts Timeline

Views: 156

.

+ http://bit.ly/vucodes (Link for Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution)

+ http://bit.ly/papersvu (Link for Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More)

+ Click Here to Search (Looking For something at vustudents.ning.com?)

+ Click Here To Join (Our facebook study Group)

Reply to This

Replies to This Discussion

Magnificent Sharing!
It's like a slow poison.

جی بالکل ۔۔۔ فرائض میں کوتاہی کریں گے تو زہر مہلک ہی ہے

right

True

RSS

© 2020   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service

.