We are here with you hands in hands to facilitate your learning & don't appreciate the idea of copying or replicating solutions. Read More>>

Looking For Something at vustudents.ning.com? Click Here to Search

www.bit.ly/vucodes

+ Link For Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution

www.bit.ly/papersvu

+ Link For Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More


Dear Students! Share your Assignments / GDBs / Quizzes files as you receive in your LMS, So it can be discussed/solved timely. Add Discussion

How to Add New Discussion in Study Group ? Step By Step Guide Click Here.

قدرتی آفات کو صرف انبیاء کے زمانے میں ھی عذاب کے طور پر استعمال کیا گیا ھے (اور انبیاء کو پیشگی اطلاع کی گئی ہے) ورنہ یہ عموماً قدرتی عوامل کی حامل ھوتی ھیں اور بلا تفریق مذھب و ملت ھوتی ھیں ،،، مگر عجیب بات یہ ھے کہ اس کے بعد ترقی یافتہ قوموں میں تو اس پر بحثیں شروع ھو جاتی ھیں کہ کلورو فلورو گیسز کے اخراج پہ قابو پا کر اوزون کی سطح کو بچایا جائے ورنہ گرمی کی حدت برف کو پگھلا دے گی جس کے متعدد اور ھمہ جہتی نقصانات ھوں گے ،برف کی عدم موجودگی کی وجہ سے زمین کو ٹھنڈا رکھنے کا قدرتی نظام مفلوج ھو جائے گا اور زمین اندر سے زبردست گرم ھو کر اپنے کرسٹ کے قرب تک آ پہنچے گی ،اس کے ابال سے زمین کی پلیٹیں آپس میں ٹکرائیں گی تو زلزلے آئیں گے ، برف پگھلے کی تو پانی زیادہ ھو جائے گا نتیجے میں بارشیں بھی زیادہ ھونگی اور سیلاب تباھی مچا دے گا وغیرہ وغیرہ،،


ھمارے یہاں مذھبی طبقہ جو خدا کو دلیل سے منوانے کی بجائے ڈنڈے سے منوانے کا عادی ھے وہ فوراً اپنے اپنے ہتھیار لے کر نکل آتا ھے ،، یہ فلاں گناہ کی وجہ سے ھوا ھے  (جس میں ان لوگوں کی لسٹ میں سر فہرست فحاشی و عریانی ہے )، حالانکہ خدا خود فرماتا ھے کہ میں گناھوں پہ پکڑنے لگوں تو اس زمین پر چلنے والا نہ چھوڑوں مگر میں نے گناھوں کی سزا کے لئے ایک دن مقرر کر رکھا ھے جب وہ دن آئے گا تو معاملہ چکا دیا جائے گا کیونکہ اللہ وہ سب کچھ بذاتِ خود دیکھتا رھا ھے ،یار ھمارے گناہ کی وجہ سے دوسرے کیوں ھلاک ھو رھے ھیں یہ تو ھر ملک اور ھر مذھب والوں کے ساتھ ھو رھا ھے ،،

جب عورتیں خوشبو لگائیں ،، جب عورتیں ننگی ھوں ،، اور بدکاری کریں گی تو زلزے آئیں گے،،، سبحان اللہ ثمہ سبحان اللہ ،،، وھاں حرم میں تو سارے ھی حاجی تھے اور عورتیں بھی پردے اور باقی احرام میں تھیں وھاں کس جرم میں وہ ھوا چلی کہ کرینیں گرا دیں اور سیکڑوں مرد عورتیں بچے ،، مار دیئے کیا وھی گنہگار تھے ؟ یا ان کو بخشنے کے نام پر بلوا کر اکٹھا کر کے اللہ نے نعوذ باللہ عبدالرشید دوستم کی طرح دھوکے سے مار دیا ان کو ؟؟


اچھا یہ بدکاری صرف عورت کرے تو ھوتی ھے ،مرد مرد سے کرے یہانتک کہ مسجد و مدرسے میں کرے یا عورت سے کرے ،،،اس کو تو بدکاری نہیں کہتے ناں؟ اور نہ اس سے زلزلے آتے ھیں ؟ بلکہ اس کو تو چھپانے کا حکم ھے ناں ،، تا کہ زلزلے کو پتہ نہ چل جائے ،، حالانکہ دیکھا یہ گیا ھے کہ کپڑا اڑ کر جھاڑی سے لپٹ جائے تو مزدور دہاڑی چھوڑ دیتا ھے مگر اس جھاڑی کی ٹوہ میں بیٹھا رھتا ھے ،، ماں کی عمر کی عورت نے برقع کیا ھو مگر جب تک دیکھ نہ لے ایک اسٹیشن آگے نکل جاتا ھے ،ویگن سے نہیں اترتا ، پھر جا کر مسئلہ کرتا ھے کہ اے ایمان والووووووووووووووو عورت کو برقعے کے رنگ کا انتخاب اپنی عمر کے لحاظ سے کرنا چاھیئے ورنہ مردوں کے ایمان کوامریکن سنڈی کی طرح کا خطرہ لاحق ھو جاتا ھے 


گویا یہود کی طرح یہی نفسیات ھے کہ عورت ھی گناہ کی پٹاری ھے حالانکہ تالی دونوں ھاتھ سے بجتی ھے ، بازارِ حسن ھو یا کوٹھیون میں شریفوں کے مجرے ،، گاھکوں کے

.بغیر کوئی دکان نہیں چلتی ،،

.

.

.

وقال الانسان مالھا
اور انسان (حیران) ہو کر کہے اسے (زمین) کیا ہو گیا ہے

قاری حنیف صاحب

+ How to Follow the New Added Discussions at Your Mail Address?

+ How to Join Subject Study Groups & Get Helping Material?

+ How to become Top Reputation, Angels, Intellectual, Featured Members & Moderators?

+ VU Students Reserves The Right to Delete Your Profile, If?


See Your Saved Posts Timeline

Views: 1123

.

+ http://bit.ly/vucodes (Link for Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution)

+ http://bit.ly/papersvu (Link for Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More)

+ Click Here to Search (Looking For something at vustudents.ning.com?)

+ Click Here To Join (Our facebook study Group)

Reply to This

Replies to This Discussion

جو قریب ہونے کی آرزو کرے گا آزمایا جائے گا۔

یعقوب یوسف کو چاہتا تھا۔یعقوب کے رجوع کے لیے اُس نے بلا نازل کردی۔

آخر یعقوب نے یوسف کو دل سے نکالا اور اُس کو دل میں بسایا۔ اُس کے سوا کسی کو دل میں نہ بسایا۔ یعقوب کا رجوع مبارک ہوا۔

سلام یعقوب پر اور سلا م یوسف پر۔

زلزلہ آیا، عوام کلمے کا ورد کرتے ہوے عمارتوں سے باہر نکل آئے اور جھٹکے ختم ہوتے ہی معاملہ ختم!!
بلاشبہ جس شخص کا ضمیر مردہ نہیں ہوا وہ اس حادثے سے بہت کچھ سیکھے گا ،،،،،
اللہ تعالی کا یہی انعام کیا کم ہے کہ الحمدللہ اس نے ہمیں عافیت سے رکھا اور سنبھلنے کا ایک اور موقع عطا کیا ،،،، لیکن ہم بھی تو دیکھیں کہ:
کتنے لوگوں نے عقیدہ توحید میں ملاوٹ سے توبہ کی؟
کتنے بے نمازیوں نے نمازی بننے کا رب سے پختہوعدہ کیا؟
کتنے سود خوروں نے رب کے خلاف اعلان جنگ سے توبہ کی؟

مساجد کی رونق اور آبادی میں کتنا اضافہ ہوا؟
کتنوں نے اپنی بہنوں کا غصب شدہ حصہ انہیں واپس دینے کا اعلان کیا؟
کتنوں نے اپنے گناہوں کا اعتراف کرکے اللہ تعالی سے معافی مانگی؟
غریبوں، یتیموں، بیواؤں اور بے سہارا لوگوں کے حقوق پہ ڈاکہ ڈالنے والے کتنے کلمہ پڑھنے والوں نے ان گناہوں سے توبہ کی؟
کتنی بے پردہ خواتین نے حجاب اوڑھنے اور باپردہ رہنے کا اعلان کیا؟
فحاشی و عریانی اور شراب نوشی کے کتنے اڈے ہمیشہ کے لیے ویران ہوے؟
مظلوموں پر ظلم ڈھانے والے کتنے جابروں نے اپنی اس بری روش کو ترک کیا؟
دین اور شعائر اسلام کا مذاق اڑانے والے کتنے لبرلز اور سیکولرز نے اپنے موقف سے رجوع کیا؟
دن رات میڈیا پر عریانی وفحاشی پھیلانے والے کتنے لوگوں نے راہِ استغفار کو اختیار کیا؟
اگر ان سوالوں کا جواب اثبات میں ہے تو الحمدللہ خیر کی علامت ہے اور اگر خدانخواستہ جواب نفی میں ہے تو خطرہ ابھی ٹلا نہیں بلکہ سنبھلنے کا مزید ایک موقع گنوا کر ہم نے اللہ کے عذاب کو خود دعوت دے ڈالی ہے.
اللہ تعالی ہماری اصلاح فرمائے اور حوادث سے ہمیں عبرت پکڑنے کی توفیق عطا فرمائے.

Ameen Sum Ameen

Umeed E Toba pe ho chuky Bht GunahGar Ya "RAB"

Muhlat E Toba Mil Rahy Hy Taufeeq Toba Bhi Ata Kr...!!!

Allah hamaray Gunah muaf farmaye, hadayat day.. or dozakh k azab say mehfooz rkhay ameen.

 


"‏اَوَ لَا یَرَوۡنَ اَنَّہُمۡ یُفۡتَنُوۡنَ فِیۡ کُلِّ عَامٍ مَّرَّۃً اَوۡ مَرَّتَیۡنِ ثُمَّ لَا یَتُوۡبُوۡنَ وَ لَا ہُمۡ یَذَّکَّرُوۡنَ ﴿۱۲۶﴾‏

‏کیا وہ نہیں دیکھتے کہ وہ ہر سال میں ایک بار یا دو بار مصیبت میں مبتلا کئے جاتے ہیں پھر (بھی) وہ توبہ نہیں کرتے اور نہ ہی وہ نصیحت پکڑتے ہیں۔‏"
(التوبة # 126)

بس ایسے مواقع پر گفتگو کرتے ھوئے کبھی غضبناک خدائ لہجے میں بات نہ کریں ۔ایسی بات کرنے کے لئے الہامی اتھارٹی چاھئے ۔جو ہمارے پاس نہیں ھے ۔

.محترم، غضبناک خدائ لہجہ اختیار کرنے کا حق صرف اسی کو ہے ہمیں نہیں

وہ ہمیں اپنی طرف رجوع کرنے کے لیے متوجہ کر رہا ہے .. کیونکہ ایسی آفات کی زد کا حصہ ہم سبھی ہیں چند مخصوص  لوگ نہیں..لہٰذا ایسی صورت حال میں عاجزی کا تقاضا ہے کہ خود بھی استغفار کو لازم پکڑتے ہوۓ جھک جانا اور دوسروں کو بھی اسکی طرف راغب کرنا..ہ

میں نے اختلاف تو نہیں کیا ۔۔۔۔ بلکہ تائيد میں ایک وضاحتی جملہ لکھا تھا

'Muazrat' for misunderstanding..

رضائے الہی کے بغیر پتہ بھی حرکت نہیں کرسکتا۔

گناہ خدا سے دوری کا سبب ہے۔ فحاشی بھی گناہ ہے۔ زلزلوں کی وجہ ہوسکتی ہے۔

اگر کوئی قوم فحاشی میں مبتلا ہے اور وہاں زلزلہ نہیں آتا۔ وجہ کیا؟

کوئی اور عذاب آجاتا ہے مثلاً سمندری طوفان۔

یا اُن کی رسی اتنی ڈھیلی چھوڑ دی جاتی ہے کہ ایڈز کا وائرس عام ہوجاتاہے۔

یا اُن کو اُن کے حال پر چھوڑ دیا جاتاہے۔

خدا کسی کو اس کے حال پر چھوڑ دیے تو یہ بھی عذاب ہے۔

-------------------------------------------------------------------------------------------------

انسان کے علم کی اوقات بس اتنی ہے کہ اللہ کے بارے میں مثالیں بیان کرتا ہے اور اپنی تخلیق اور ناقص العقل ہونے کو بھول جاتا۔

بہت صحیح لیکھا آپ نے ۔ راحیل ۔

RSS

© 2019   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service

.