Latest Activity In Study Groups

Join Your Study Groups

VU Past Papers, MCQs and More

We non-commercial site working hard since 2009 to facilitate learning Read More. We can't keep up without your support. Donate.


ایک دفعہ ایک گدھا ایک گہرے کنویں میں جا گرا اور زور زور سے رینکنے گا. گدھے کا مالک کسان تھا جو کنویں کے کنارے پہ کھڑا اسے بچانے کی ترکیبیں سوچ رہا تھا. جب اسے کوئی طریقہ نہیں سوجھا تو ہار مان کر دل کو تسلی دینے لگا کہ گدھا تو اب بوڑھا ہو چکا ہے، وہ اب میرے کام کا بھی نہیں رہا، چلو اسے یوں ہی چھوڑ دیتے ہیں، اور کنویں کو بھی آخر کسی دن بند کرنا ہی پڑے گا، اس لیے اسے بچا کر بھی کوئی خاص فائدہ نہیں. یہ سوچ کر اس نے اپنے پڑوسیوں کی مدد لی اور کنواں پاٹنا شروع کر دیا. سب کے ہاتھ میں ایک ایک پھاوڑا تھا جس سے وہ مٹی، بجری اور کوڑا کرکٹ کنویں میں ڈال رہے تھے۔
گدھا اس صورت حال سے بہت پریشان ہوا. اس نے اور تیز آواز نکالنی شروع کر دی. کچھ ہی لمحے بعد گدھا بالکل خاموش سا ہو گیا. جب کسان نے کنویں میں جھانکا تو یہ دیکھ کر حیران رہ گیا کہ جب جب گدھے کے اوپر مٹی اور کچرا پھینکا جاتا ہے تب تب وہ اسے جھٹک کر اپنے جسم سے نیچے گرا دیتا ہے اور پھر گری ہوئی مٹی پر کھڑا ہو جاتا ہے. یہ سلسلہ کافی دیر تک چلتا رہا. کسان اپنے پڑوسیوں کے ساتھ مل کر مٹی اور کچرا پھینکتا رہا اور گدھا اسے اپنے بدن سے ہٹا ہٹا کر اوپر آتا گیا، اور دیکھتے ہی دیکھتے کنویں کے منڈیر تک پہنچ گیا اور باہر نکل پڑا. یہ منظر دیکھ کر کسان اور اس کے پڑوسی سکتے میں پڑ گئے. ان کی حیرانی قابل دید تھی. اس غیر متوقع نتیجے پر وہ گدھے سے بھی بڑھ کر مجسمہ حیرت بنے ہوئے تھے۔
(عربی تحریر کا خلاصہ)
سبق:
زندگی میں ہمارے ساتھ بھی ایسے واقعات رونما ہو سکتے ہیں کہ ہمارے اوپر کچرا اچھالا جائے، ہماری کردار کشی کی جائے، ہمارے دامن کو داغدار کیا جائے، ہمیں طعن و تشنیع کا نشانہ بنایا جائے، لیکن گندگی کے اس گڑھے سے بچنے کا طریقہ یہ نہیں کہ ہم ان غلاظتوں کی تہہ میں دفن ہو کر رہ جائیں، بلکہ ہمیں بھی ان بے کار کی چیزوں کو شانہ اچک کر نیچے گراتے ہوئے اوپر کی طرف اور آگے کی سمت بڑھتے رہنا چاہیے.
زندگی میں ہمیں جو بھی مشکلات پیش آتی ہیں وہ پتھروں کی طرح ہوتی ہیں مگر یہ ہماری عقل پر منحصر ہے کہ آیا ہم ہار مان کر ان کے نیچے دب جائیں یا 
ان کے اوپر چڑھ کر مشکل کے کنویں سے باہر آنے کی ترکیب کریں

Views: 640

Reply to This

Replies to This Discussion

awesome 

super

mind blowing

thought provoking

jitna kaha jiya kaam ha

bhut ahlaw post

thanks for sharing sisooo

 

awwwwwwwwwwwwww aniqooo inni taleef kbi sapny main v ni suni 

thantu shooooooo much sisooo

Happy cнαи∂α :)

main na tareef ni ki suchii main ya bhut achi posting ki ha ap na really muja bhut ziyda pasand ha ziyda wo jo last pa kaha gaya ha ....

 

Aniqooo Sisoo Nawazish Apti 

HappY Laho Dear :)

Absoloutely Right
Its fabulous

yes Fari it's fabulous agr koi smjh ly to :)

thanks for reading :)

آج ہم عقل وشعور کی کئی منزلیں طے کر آئے ہیں۔ انسانی تہذیب و تمدن اپنے عروج پر ہے، علم کی فراوانی ہے۔ یہ سب چیزیں مل کر ایک مہذب معاشرے کو تشکیل دیتی ہیں جس میں کسی کی کردارکشی کرنا بغیر کسی ثبوت کے انتہائی معیوب حرکت سمجھی جاتی ہے۔ قرآن ہمیں جو بات سمجھاتا ہے وہ یہ ہے کہ اگر بلاوجہ کسی پر کیچڑ اچھالا جا رہا ہے یا دوسرے لفظوں میں بہتان لگایا جا رہا ہے تو اس فعل سے لاتعلقی اختیار کی جائے بلکہ متاثرہ شخص کے بارے میں اچھا گمان رکھتے ہوئے اسکا دفاع کیا جائے۔ اسکی تفصیل ہمیں سورۃ نور میں ملتی ہے کہ بغیر گواہوں کے کسی پر الزام لگانا سخت گناہ کے زمرے میں آتا ہے اور اسکی سزا بھی بہت کڑی ہے لیکن ہم اپنے معاشرے میں دیکھتے ہیں کہ چھوٹی سی بات کا بتنگڑ بنا دیا جاتا ہے اس سے نہ صرف متعلقہ افراد کی زندگیاں متاثر ہوتی ہیں بلکہ باقی لوگوں کو بھی کوئی اچھا پیغام نہیں جاتا، برائی کی ترویج ہوتی ہے اور زندگی کے اچھے پہلو کہیں دب کر رہ جاتے ہیں جو معاشرے کو اچھائی کی طرف متحرک کر سکتے ہیں۔

thantu Saloosh Ma'am for sharing your precious thoughts with us 

JazakAllah Ma'am 

Allah hum sb ko in pal amal klny ki taufeeq ata farmaye ( Ameen) 

سروش

sisoo ap na sahi kaha ha log aj kal ilzam laga data han aur souchta bi ni han k wo asa ho ga bi ya ni lakin agla banda safiyan da da k thak jata ha lakin un ki aik bi ni manni jati ...lakin jab ap insan sabar kar jata ha to un k jo sawab Allah data han phr wohi log kahta han ya sahi ha hum na wasa hi us ko sahi ni samanja wo bat hi kya jab time guzar jiya to samanji jiya 

yes aniqo sisoo par aj kal sabar kis main , pehly to me phil baqi log koi ni klta sabar :( 

soooo moralfull,,,

RSS

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service