We are here with you hands in hands to facilitate your learning & don't appreciate the idea of copying or replicating solutions. Read More>>

Looking For Something at vustudents.ning.com? Click Here to Search

www.bit.ly/vucodes

+ Link For Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution

www.bit.ly/papersvu

+ Link For Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More


Dear Students! Share your Assignments / GDBs / Quizzes files as you receive in your LMS, So it can be discussed/solved timely. Add Discussion

How to Add New Discussion in Study Group ? Step By Step Guide Click Here.

قتل کا واقعہ اور حضرت موسیٰ علیہ السلام

حضرت موسیٰ علیہ السلام سے جو قتل اتفاقا" سرزد ہو گیا تھا اسکی خبر بادشاہ کو ہو گئی اور اس نے آپؑ کی گرفتاری کا حکم دے دیا لیکن حضرت موسیٰ علیہ السلام نے مصر سے ہجرت کر لی اور خوف محسوس کر رہے تھے کہ کہیں فرعون کی قوم کا کوئی شخص آپ تک نہ پہنچ جاۓ۔ آُپؑ کبھی مصر سے باہر نہ گئے تھے اسلئے انہیں کچھ پتہ نہ تھا کہ وہ کدھر جائیں پس وہ ایک راستے پر چل پڑے اور فرمایا کہ مجھے امید ہے میرا رب مجھے سیدھے راستے لے جاۓ گا اور وہ منزلِ مقصود تک پہنچ جائیں گے اور ایسے ہی ہوا ۔ انہیں منزل مل گئی بلکہ عظیم منزل ملی۔
حضرت موسیٰ علیہ السلام مدین پہنچ گئے مدین وہی شہر ہے جس میں حضرت شعیب علیہ السلام کی قوم پر عذابِ الہی نازل ہوا تھا۔ پس موسیٰؑ وہاں پہنچے اور دیکھا کہ ایک کنویں پر کچھ لوگ اپنے مویشیوں کو پانی پلا رہے تھے اور دو لڑکیاں بھی تھیں جو انتظار کر رہیں تھیں کہ چرواہے اپنےمویشیوں کو پانی پلا کر ہٹیں تو وہ اپنی بکریوں کو پانی پلائیں۔ حضرت موسیٰ علیہ السلام نے ان سے بات کی تو پتہ چلا کہ ان لڑکیوں کے والد بزرگ اور کمزور ہیں اسلئے انہیں مویشی چرانے کے لئے آنا پڑتا ہے۔ یہ سن کے انہوں نے خود ان لڑکیوں کے مویشیوں کو پانی پلا دیا اور پھر وہاں سے ہٹ گئے۔ وہ طویل سفر کے بعد تھکے ہارے تھے اس لئے کیکر کے ایک پیڑ کے نیچے بیٹھ گئے اور فرمایا:۔ اے پروردگار! تو جو کچھ بھلائی میری طرف اتارے میں اسکا محتاج ہوں۔" ان خواتین نے آپؑ کی یہ بات سن لی۔
وہ اپنے گھر واپس چلی گئیں اور کچھ ہی دیر بعد واپس آ گئیں۔ ان میں سے ایک شرم و حیا کا پیکر حضرت موسیٰ علیہ السلام کے پاس آئی اور کہا کہ میرے والد آپکو بلا رہے ہیں تاکہ آپکو جانوروں کو پانی پلانے کی اجرت دے سکیں۔
حضرت موسیٰ علیہ السلام جب ان کے والد کے پاس پہنچے تو اپنا پورا حال کہہ سنایا کہ مصر کے بادشاہ فرعون کے ڈر سے اپنے ملک مصر سے نکلا ہوں ۔ وہ بزرگ کہنے لگے کہ اب تم نہ ڈرو تم نے ظالم قوم سے نجات پا لی ہے تب ایک لڑکی نے اپنے والد سے کہا کہ ابا جان انہیں مزدوری پر رکھ لیجئے تاکہ وہ ہماری بکریاں چرا سکیں کیونکہ یہ طاقتور اور دیانتدار ہیں جب اس نے یہ بات کہی تو والد نے پوچھا کہ تمہیں اس بات کی کیسے خبر؟ اس نے کہا کہ جو بھاری پتھر بہت سے آدمی مل کے اٹھاتے ہیں انہوں نے اکیلے ہی اٹھا لیا اس سے مجھے انکی طاقت کا اندازہ ہوا اور جب میں انہیں لے کے گھر آ رہی تھی تو میں آگے چل رہی تھی انہوں نے کہا کہ میرے پیچھے چلو اور جب مڑنا ہو تو اس راستے کی طرف کنکری پھینک کے اس اشارے سے مجھے بتا دینا۔ الغرض بزرگ نے حضرت موسیٰ علیہ السلام سے کہا کہ میں اپنی دونوں بیٹیوں میں سے ایک کا نکاح آپؑ کے ساتھ کرنا چاہتا ہوں اس مہر پر کہ آپ آٹھ سال تک میرا کام کاج کریں گے لیکن ہاں! اگر آپ دس سال پورے کریں تو یہ آپکی طرف سے احسان ہو گا اور میں ہر گز نہیں چاہتا کہ آپکو کسی مشقت میں ڈالوں۔ اللہ کو منظور ہے تو آپ مجھے بھلا آدمی پائیں گے۔
پس انکے درمیان اللہ کو گواہ بنا کر یہ بات پختہ ہو گئی اور حضرت موسیٰ علیہ السلام نے اپنے سسر سے فرمایا کہ آپ نے جو بات کہی درست ہے میں جو بھی مدت پوری کرونگا مجھے اسکا حق ہو گا اس سلسلے میں مجھ پر کوئی زیادتی نہیں کیجاۓ گی۔ ہماری مفاہمت پر اللہ گواہ ہے جو سب کچھ سن رہا ہے تاہم حضرت موسیٰ علیہ السلام نے زیادہ مدت پوری کی، یعنی پورے دس سال انکی خدمت کی۔
حضرت سعید بن جبیر رحمتہ اللہ علیہ سے روایت ہے، انہوں نے فرمایا کہ مجھ سے حیرہ کے ایک یہودی نے پوچھا کہ حضرت موسیٰ علیہ السلام نے دونوں میں سے کونسی مدت پوری کی تھی؟ میں نے کہا مجھے تو نہیں معلوم البتہ میں عرب کے بڑے عالم کی خدمت میں حاضر ہو کر ان سے دریافت کرونگا۔ تو میں حضرت عبداللہ بن عباسؓ کی خدمت میں حاضر ہوا اور ان سے یہ مسئلہ دریافت کیا۔ انہوں نے فرمایا کہ آپؑ نے زیادہ اور بہتر مدت پوری کی تھی۔ اللہ کا رسول جب کوئی بات کہہ دے تو اسے پورا کرتا ہے۔ (صحیح البخاری، الشھادات، حدیث ۲۶۸۴)
بحوالہ قصص الانبیاء

+ How to Follow the New Added Discussions at Your Mail Address?

+ How to Join Subject Study Groups & Get Helping Material?

+ How to become Top Reputation, Angels, Intellectual, Featured Members & Moderators?

+ VU Students Reserves The Right to Delete Your Profile, If?


See Your Saved Posts Timeline

Views: 133

.

+ http://bit.ly/vucodes (Link for Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution)

+ http://bit.ly/papersvu (Link for Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More)

+ Click Here to Search (Looking For something at vustudents.ning.com?)

+ Click Here To Join (Our facebook study Group)

Reply to This

Replies to This Discussion

JAZAK ALLAH,,,

v.nice sharing cute sisoo
JAZAK ALLAH

RSS

Latest Activity

+ ! ! ! ❣ maho ❣ ! + liked +++A++R+++'s discussion اے بنت حوا
11 minutes ago
+ ! ! ! ❣ maho ❣ ! + liked +++A++R+++'s discussion اے بنت حوا
11 minutes ago
Maan updated their profile
11 minutes ago
+ Տehɑr Ƙհɑղ + replied to +++A++R+++'s discussion اے بنت حوا
11 minutes ago
+ ! ! ! ❣ maho ❣ ! + liked Rumz zahra's discussion بزم_ادب
11 minutes ago
+ ! ! ! ❣ maho ❣ ! + liked +ıllıllı $µǥąя ǥ€ɲɨµ$ ıllıllı+'s discussion Aye Allah
11 minutes ago
+ Տehɑr Ƙհɑղ + replied to +++A++R+++'s discussion اے بنت حوا
11 minutes ago
+ ! ! ! ❣ maho ❣ ! + liked Kinza Mubasher's discussion Khoobsoort aur bakamaal aurt
11 minutes ago
+ Տehɑr Ƙհɑղ + replied to +++A++R+++'s discussion اے بنت حوا
12 minutes ago
BS MATH replied to Kinza Mubasher's discussion Khoobsoort aur bakamaal aurt
16 minutes ago
+++A++R+++ posted discussions
34 minutes ago
Profile Iconkhan! and Shahid Ali joined Virtual University of Pakistan
37 minutes ago

Today Top Members 

© 2020   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service

.