We have been working very hard since 2009 to facilitate in your learning Read More. We can't keep up without your support. Donate Now.

www.bit.ly/vucodes

+ Link For Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution

www.bit.ly/papersvu

+ Link For Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More

Looking for Something at Site? Search Below

یہ ان کا ظرف ہے بیٹھے ہیں آستینوں میں - یہ میری خو ہے کہ میں یار یار کرتا ہوں

دلوں کی جانے خدا، اعتبار کرتا ہوں
سو ہر کسی کو میں اپنا شمار کرتا ہوں

میں کیسے اس کے نشانے پہ جا کے بیٹھتا ناں
جو کہہ رہا تھا مجھے ، تجھ سے پیار کرتا ہوں

یہ ان کا ظرف ہے بیٹھے ہیں آستینوں میں
یہ میری خو ہے کہ میں یار یار کرتا ہوں

یہ بات طے ہے کہ لوٹے نہ جانے والے کبھی
میں جانتا ہوں مگر انتظار کرتا ہوں

ہیں اندھی بستیاں پھر بھی جلا رہا ہوں دیے
میں بہرے کانوں میں چیخ و پکار کرتا ہوں

نبھا رہا ہوں وہ وعدے بھی،جو کئے ہی نہیں
میں خود کو کتنا مروت میں خوار کرتا ہوں

کبھی جو دل یہ بھر آیا اندھیرے اوڑھ لئے
نہ ساتھ سایہ تلک سوگوار کرتا ہوں

میں صرف تکتا نہیں آئینے میں صورت کو
زبان کو بھی بہت شرم سار کرتا ہوں

یہ ہے یقین مرا، اصل زندگی ہے اور
سو اپنا جینا میں تب تک ادھار کرتا ہوں

خیال کیا ہے محبت کے بارے میں ابرک
غلط غلط ہے مگر بار بار کرتا ہوں


+ http://bit.ly/vucodes (Link for Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution)

+ http://bit.ly/papersvu (Link for Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More)

+ Click Here to Search (Looking For something at vustudents.ning.com?)

+ Click Here To Join (Our facebook study Group)


Views: 98

Reply to This

Replies to This Discussion

kia baat hy 

RSS

Today Top Members 

© 2020   Created by +M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service

.