We have been working very hard since 2009 to facilitate in learning Read More. We can't keep up without your support. Donate.

اے دسبمر سنو

تم منحوس تھوڑی ہو

ہمیشہ واپس آتے ہو

تم بحبوب تھوڑی ہو

جو جا کر لوٹتا کب ہے

سنو

اسی موسم میں تو اکژ

محبت روٹھ جاتی ہے

ہزاروں دل جلوں کی 

امیدیں ٹوٹ جاتی ہیں

یہ موسم بھی تو ایسا ہے

کہ پتے جھڑ پی جاتے ہیں

ہزاروں چاہنے والے

آخر بچھڑ ہی جاتے ہیں

آخر بچھڑ ہی جاتے ہیں

(احمد)

+ IUUOƆƎUT +

Views: 240

Reply to This

Replies to This Discussion

shukrya

shukrya

niceee.....

not bad :P

anywaya keep it up :) 

khoob

zbrdst ^_^.......

December ki shab aakhir na pucho kis tarhan guzri,

Yhi lagta tha har dam woh humen kuch phool behjy ga.

RSS

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service