میں جو چپ ہوں تو یہ تیری حرمت کا تقدس ہے

میں جو چپ ہوں تو یہ تیری حرمت کا تقدس ہے

ورنہ کیا مجال ہے کہ کچھ کہہ جائیں زمانے والے

میں نے رخ موڑے ہیں کئی بپھرے ہوئے طوفانوں کے

کتنے جوش فہم ہیں،دیپ میری امیدوں کے بجھانے والے

ان کو بتلاو کہ پچھاڑے ہیں شیروں کا جگر رکھنے والے میں نے

مجھ کو کیا گرائیں گے ،یہ خود لڑکھڑانے والے

خون دل دے کر سیراب کیا ان پھولوں کو

تم تو جانتے ہو گلشن کو اگانے والے

میرے غرور کی وجہ فقط تیرا سہارا ہے

چراغ میری زندگی کے ہواوں میں جلانے والے

کب تک مجھ سے منسلک رہتے ہو تم ، کیا خبر مجھ کو

ہم تو ہیں اس صف میں جو ہیں تا دم مرگ تعلق کو نبھانے والے

احمد

Views: 259

Reply to This

Replies to This Discussion

zaberdasst!

shukrya

thank you

nice

thank you

superrrrrrrrrrrrrrrrrrrr

fantastic,owsm and speechless 

thank you

Bhuttt khouuuubbbb!! 

Ye apki khudki likhii hoii? 

+ ! ! ! ! ! dᎥxᎥe dusτ꧂

JI KHUD KI LIKHI HUI HY 

faboleous fantastic osm r sad b

shukrya

RSS

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service