We have been working very hard since 2009 to facilitate in learning Read More. We can't keep up without your support. Donate.

صبر کے لفافوں میں۔۔
ہم نے تیرے وعدوں کو
تہہ بہ تہہ کر کے
جوڑ جوڑ رکھا ہے
کوئی حصہ بستر پر
کوئی ٹکڑا ٹیرس پر
ہم نے تیری یادوں کو توڑ توڑ رکھا ہے
جن صفحوں پہ ذکر ہے ۔
تیرے میرے ملنے کا۔
ڈائری کے ان ورقوں کو موڑ موڑ رکھا ہے
دریچے میرے خیال کے ۔
مسکن تیرے پیکر کے۔
جانِ جاں آج بھی لمس تیرا......!!!
اوڑھ اوڑھ رکھا ہے۔۔۔۔۔۔۔!!!!

Views: 29

Reply to This

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service