Latest Activity In Study Groups

Join Your Study Groups

VU Past Papers, MCQs and More

آپ اسطرح تو ہوش اُڑایا نہ کیجئے
یوں بن سنور کے سامنے آیا نہ کیجئے

کہیئے توآپ محو ہیں کس کے خیال میں
ہم سے تو دل کی بات چھپا یا نہ کیجئے

میں آپ کا؛ گھرآپ کا ؛ آئیں ہزار بار
لیکن کسی کی بات میں آیا نہ کیجئے

اُٹھ جائیں گے ہم آپ کی محفل سے آپ ہی
دُشمن کو رو برو تو بیٹھیا نہ کیجئے

دل دور ہوں تو قرب کی صورت کہا رہی
رسمً کسی کو ہاتھ ملا یا نہ کیجئے

محروم ہوں لطافتِ فطرت سے جو نصیر
اُن بے حِسوں کو شعر سنایا نہ کیجئے

Views: 14

Reply to This

Replies to This Discussion

MashaAllah

RSS

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service