Latest Activity In Study Groups

Join Your Study Groups

VU Past Papers, MCQs and More

اذیت ناک ہوتا ہے کسی کے ہجر میں رہنا

اذیت ناک ہوتا ہے کسی کے ہجر میں رہنا

خوشی جتنی بھی مل جائے میں غم محسوس کرتا ہوں

کسی کے ہجر میں آنکھوں کو روئے عمر گزری ہے

مگر اس آنکھ کو اب تک میں نم محسوس کرتا ہوں

مری ہر اک خوشی تم سے مری رگ رگ میں بہتے ہو

فقط تیرا ہی میں ہمدم الم محسوس کرتا ہوں

عقیدت اور الفت سے میں جب مسجد کو جاتا ہوں

میں اس کچی سی مسجد کو حرم محسوس کرتا ہوں

الگ یہ بات ہے اب تک مدینے جا سکا نہ میں

مگر ان کا میں خود پر سب کرم محسوس کرتا ہوں

ہمارے درمیاں جب سے رویوں کی چھڑی ہے جنگ

اگر وہ آپ بھی کہہ لے میں تم محسوس کرتا ہوں

ہر اک نیکی کا بدلہ لاکھ نیکی ہے سحرؔ اس ماہ

عبادت جتنی کر لوں پھر بھی کم محسوس کرتا ہوں

Views: 28

Reply to This

Replies to This Discussion

wah osm

Aye haye .. 

Mujh ko maloom na thi hijr ki yeh ramz k to..

Jab mery paas na hoga to hr soo hoga .. ^_^)

RSS

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service