Latest Activity In Study Groups

Join Your Study Groups

VU Past Papers, MCQs and More

We non-commercial site working hard since 2009 to facilitate learning Read More. We can't keep up without your support. Donate.


میری زندگی تو فراق ہے
وہ ازل سے دل میں مکیں سہی
وہ نگاہ شوق سے دور ہیں
رگ جاں سے لاکھ قریں سہی

ہمیں جان دینی ہے
اک دل دن وہ کسی طرح وہ کہیں سہی
ہمیں آپ کھنچیے دار پر جو نہیں کوئی تو ہمیں سہی

سر طور ہو سر حشر ہو
ہمیں انتظار قبول ہے
وہ کبھی ملیں وہ کہیں ملیں
وہ کبھی سہی وہ کہیں سہی

نہ ہو ان پہ جو مرا بس نہیں
کہ یہ عاشقی ہے ہوس نہیں
میں انکا تھا انکا ہوں وہ میرے نہیں تو نہ سہی

ہو جو فیصلہ ہو سنایے
اسے حشر پہ نہ اُٹھایے
جو کریں گے آپ ستم وہاں
وہ ابھی سہی وہ یہیں سہی

اسے دیکھنے کی جو لو لگی تو
نصیر ریکھ ہی لیں گے ہم
وہ ہزار آنکھ سے دور ہو وہ ہزار پردہ نشیں سہی

Views: 6

Reply to This

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service