Latest Activity In Study Groups

Join Your Study Groups

VU Past Papers, MCQs and More

We non-commercial site working hard since 2009 to facilitate learning Read More. We can't keep up without your support. Donate.


ہوس کی آگ میں جلتے بشر پہ لعنت ہو
نہیں ہے جس میں حیا اُس نظر پہ لعنت ہو

ترے پڑوس میں کتنے غریب بُھوکے مرے
امیرِ شہر ترے مال و زر پہ لعنت ہو

ترس رہے ہیں کئی لوگ جھونپڑی کےلیے
ترے محل ترے شیشے کے گھر پہ لعنت ہو

کہ جس کے در سے سوالی ہی خالی لوٹ آئے
فقط وہ نام کے حاتم کے در پہ لعنت ہو

جہاں غریب کی سُنتا نہ ہو صدا کوئی
منافقوں کے وہ سارے نگر پہ لعنت ہو

جہاں غلامی چلی آ رہی ہو نسلوں سے
تو ایسی زیست پہ ایسی گُزر پہ لعنت ہو

کسی کی بیٹی کی عزت کو جو کچل ڈالے
ہر ایسے شخص کی گندی نظر پہ لعنت ہو

وہ جن کے واسطے انصاف بیچ دے منصف
سبھی حرام کے لعل و گہر پہ لعنت ہو

کہ جس کا کام ہو تکلیف دینا لوگوں کو
فقط وہ نام کے مُسلم بشر پہ لعنت ہو

جو دھوکا دے کے کماتا ہو رزق اے باقرؔ
تو ایسے شخص پہ اُس کے ہُنر پہ لعنت ہو

Views: 37

Reply to This

Replies to This Discussion

jo andr se kuch.. or bahir se kuch..

esi munafaqat pr b aik lanat ho

Sad Poetry | Urdu Sad Poetry | 4 Lines Poetry | Poetry Pics | Islamic Poetry | Urdu Poetry World - Urdu Poetry World

وس کی آگ میں جلتے بشر پہ لعنت ہو
نہیں ہے جس میں حیا اُس نظر پہ لعنت ہو

deserved the lannat      at many times  ,,,   PPP 

ہوس کی آگ میں جلتے بشر پہ لعنت ہو
نہیں ہے جس میں حیا اُس نظر پہ لعنت ہو

Kamal lines 

RSS

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service