Latest Activity In Study Groups

Join Your Study Groups

VU Past Papers, MCQs and More

We non-commercial site working hard since 2009 to facilitate learning Read More. We can't keep up without your support. Donate.


کھینچ لایا تجھے احساس تحفظ مجھ تک 

ہم سفر ہونے کا تیرا بھی ارادہ کب تھا 

درگزر کرتا رہا تیری خطائیں برسوں 

میرے جذبات و خیالات تو سمجھا کب تھا 

موج در موج بھنور کھینچ رہا تھا مجھ کو 

میری کشتی کے لیے کوئی کنارہ کب تھا 

ظاہراً ساتھ وہ میرے تھا مگر آنکھوں سے 

بد گمانی کے نقابوں کو اتارا کب تھا 

تجھ کو معلوم نہیں اپنی وفاؤں کے عوض 

جان جاں میں نے جو چاہا تھا زیادہ کب تھا 

دو کناروں کو ملایا تھا فقط لہروں نے 

ہم اگر اس کے نہ تھے وہ بھی ہمارا کب تھا 

اس نے میری ہی رفاقت کو بنایا ملزم 

میں اگر بھیڑ میں تھا وہ بھی اکیلا کب تھا 

وہ ترا عہد وفا یاد ہے اب تک مجھ کو

بھول بیٹھا ہوں محبت کا زمانہ کب تھا 

Views: 28

Reply to This

Replies to This Discussion

Amzing

Thanks

zabardast

Thanks

اس نے میری ہی رفاقت کو بنایا ملزم 

میں اگر بھیڑ میں تھا وہ بھی اکیلا کب تھا 

IMPRESSIVE LINES.......!!!!!!!!!!!!!!!!!!!!!!!!!!!!!!!

Thanks. ..

RSS

Looking For Something? Search Below

VIP Member Badge & Others

How to Get This Badge at Your Profile DP

------------------------------------

Management: Admins ::: Moderators

Other Awards Badges List Moderators Group

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service