Latest Activity In Study Groups

Join Your Study Groups

VU Past Papers, MCQs and More

We non-commercial site working hard since 2009 to facilitate learning Read More. We can't keep up without your support. Donate.


جانے والوں کے لیے دل نہیں تھوڑا کرتے

ہاتھ چھوٹیں بھی تو رشتے نہیں چھوڑا کرتے
وقت کی شاخ سے لمحے نہیں توڑا کرتے

جس کی آواز میں سلوٹ ہو نگاہوں میں شکن
ایسی تصویر کے ٹکڑے نہیں جوڑا کرتے

لگ کے ساحل سے جو بہتا ہے اسے بہنے دو
ایسے دریا کا کبھی رخ نہیں موڑا کرتے

جاگنے پر بھی نہیں آنکھ سے گرتیں کرچیں
اس طرح خوابوں سے آنکھیں نہیں پھوڑا کرتے

شہد جینے کا ملا کرتا ہے تھوڑا تھوڑا
جانے والوں کے لیے دل نہیں تھوڑا کرتے

جا کے کہسار سے سر مارو کہ آواز تو ہو
خستہ دیواروں سے ماتھا نہیں پھوڑا کرتے

Views: 24

Reply to This

Replies to This Discussion


جس کی آواز میں سلوٹ ہو نگاہوں میں شکن
ایسی تصویر کے ٹکڑے نہیں جوڑا کرتے

AMAZING

دوا کرتے کرتے دعا کرتے کرتے 

جیا ہوں امید شفا کرتے کرتے 

قضا آئے حمد و ثنا کرتے کرتے 

خدا سے دعائے عطا کرتے کرتے 

ترس آ گیا ہوگا منصف کو ہم پر 

بری کر گیا جو سزا کرتے کرتے 

ہماری طرف کس لیے اب ہیں مائل 

بدل کیوں گئے وہ جفا کرتے کرتے 

ہماری طرف کس لیے اب ہیں مائل 

بدل کیوں گئے وہ جفا کرتے کرتے 

حریفوں کا مشرب ہے شکوے شکایت 

یہیں مر مٹیں گے گلہ کرتے کرتے 

کہیں ڈوب جائے نہ اپنا سفینہ 

یہیں ناخدا ناخدا کرتے کرتے 

رئیسوں کی صحت میں کیا فرق آیا 

ہمیں مر مٹے اکتفا کرتے کرتے 

وہ آدم کی معصومیت اللہ اللہ 

وہی کر کے بیٹھا منا کرتے کرتے 

کسر سب نکل جائے گی نامیؔ اک دن 

جیے ہیں جو مکر و ریا کرتے کرتے 

RSS

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service