Latest Activity In Study Groups

Join Your Study Groups

VU Past Papers, MCQs and More

We non-commercial site working hard since 2009 to facilitate learning Read More. We can't keep up without your support. Donate.

ابھی تو دیکھ رہا ہوں اسے خفا کر کے

پرائی نیند میں سونے کا تجربہ کر کے 

میں خوش نہیں ہوں تجھے خود میں مبتلا کر کے 

اصولی طور پہ مر جانا چاہیے تھا مگر 

مجھے سکون ملا ہے تجھے جدا کر کے 

یہ کیوں کہا کہ تجھے مجھ سے پیار ہو جائے 

تڑپ اٹھا ہوں ترے حق میں بد دعا کر کے 

میں چاہتا ہوں خریدار پر یہ کھل جائے 

نیا نہیں ہوں رکھا ہوں یہاں نیا کر کے 

میں جوتیوں میں بھی بیٹھا ہوں پورے مان کے ساتھ 

کسی نے مجھ کو بلایا ہے التجا کر کے 

بشر سمجھ کے کیا تھا نا یوں نظر انداز 

لے میں بھی چھوڑ رہا ہوں تجھے خدا کر کے 

تو پھر وہ روتے ہوئے منتیں بھی مانتے ہیں 

جو انتہا نہیں کرتے ہیں ابتدا کر کے 

بدل چکا ہے مرا لمس نفسیات اس کی 

کہ رکھ دیا ہے اسے میں نے ان چھوا کر کے 

منا بھی لوں گا گلے بھی لگاؤں گا میں 

ابھی تو دیکھ رہا ہوں اسے خفا کر کے 

Views: 37

Reply to This

Replies to This Discussion

تو پھر وہ روتے ہوئے منتیں بھی مانتے ہیں 

جو انتہا نہیں کرتے ہیں ابتدا کر کے

Tm bhi Amna :-! 

RSS

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service