Latest Activity In Study Groups

Join Your Study Groups

VU Past Papers, MCQs and More

We non-commercial site working hard since 2009 to facilitate learning Read More. We can't keep up without your support. Donate.

منہ دکھائی میں لعل لیتے ہیں
ورنہ گھونگھٹ نکال لیتے ہیں
دیکھ کر ان کو انکشاف ہوا
پھول بھی سر پر شال لیتے ہیں
وہ وہاں سے بدن اٹھا لائے
ہم جہاں سے خیال لیتے ہیں
یاد بازار میں وہ جب آئیں
سیب ہم خوب لال لیتے ہیں
ان سے آنچل بھی کم سنبھلتا ہے
لوگ خود کو سنبھال لیتے ہیں
اک کلی کو چوما ہے چرا کر ہم نے
بوسہ قدرے حلال لیتے ہیں
پڑھنے والے ہیں قیس اتنے شریر
اپنا مطلب نکال لیتے ہیں

کمنٹ میں ایک شعر آیا، جو اس غزل کا نہیں ہے

ہوتے ہیں جب کسی بات پر اداس
ہم بٹوے سے تیری تصویر نکال لیتے ہیں

Views: 18

Reply to This

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service