Latest Activity In Study Groups

Join Your Study Groups

VU Past Papers, MCQs and More

We non-commercial site working hard since 2009 to facilitate learning Read More. We can't keep up without your support. Donate.

پہلے پہل تھا اس کا محبت سے دل بھرا - پھر رفتہ رفتہ ساری شکایات سے گیا

کب غم کہے سنے سے ، کسی بات سے گیا
میں رات تھا ، اندھیرا کبھی رات سے گیا
-----
پہلے پہل تھا اس کا محبت سے دل بھرا
پھر رفتہ رفتہ ساری شکایات سے گیا
-----
جانے یہ کیسے فاصلے آئے ہیں درمیاں
مجھ میں جو بس رہا تھا ملاقات سے گیا
-----
کچھ اس لئے بھی آنکھ میں رنگینیاں ہیں کم
جو نقش روشنی تھا خیالات سے گیا
-----
اس حادثے میں حادثہ در اصل یہ ہوا
جو دل زباں دراز تھا ہر بات سے گیا
-----
ابرک نہ رنج کر یہ یہاں کا رواج ہے
بچ کر نہ کوئی زیست کی اس گھات سے گیا
.
.
.
.
۔۔۔۔۔۔۔۔۔ اتباف ابرک

Views: 46

Replies to This Discussion

                                                                                              اس حادثے میں حادثہ در اصل یہ ہوا  
                                                                                                جو دل زباں دراز تھا ہر بات سے گیا 
awlaa

RSS

Looking For Something? Search Below

Latest Activity

VIP Member Badge & Others

How to Get This Badge at Your Profile DP

------------------------------------

Management: Admins ::: Moderators

Other Awards Badges List Moderators Group

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service