We are here with you hands in hands to facilitate your learning & don't appreciate the idea of copying or replicating solutions. Read More>>

Looking For Something at vustudents.ning.com? Click Here to Search

www.bit.ly/vucodes

+ Link For Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution

www.bit.ly/papersvu

+ Link For Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More

پاکستان کے وہ 7’آسیب زدہ‘ مقامات جن کے بارے میں مشہور کہانیاں سن کر کسی کےبھیرونگٹے کھڑے ہوجائیں

یوں تو پاکستان میں ہزاروں ایسے مقامات ہوں گے جنہیں آسیب زدہ کہا جاتا ہے لیکن ان

سب میں سے 7مقامات ایسے آسیب زدہ ہیں جن کے متعلق خوفناک کہانیاں مشہور ہیں

اور لوگ رات کے وقت ان مقامات پر جانے سے ڈرتے ہیں۔ آئیے آپ کو ان سات مقامات کے

متعلق آگاہ کرتے ہیں۔

کارساز روڈ کراچی


کارساز روڈ کراچی کی معروف ترین سڑکوں میں شمار ہوتی ہے۔ اس سڑک کے بارے

میںقدیم وقتوں سے آج تک ایک کہانی بیان کی جاتی ہے کہ اکثر اس روڈ پر ایک پراسرار

لڑکی کو دیکھا جاتا ہے جو دلہن بنی ہوئی ہوتی ہے اور اس نے سرخ لباس پہن رکھا ہوتا ہے۔

لوگوں کا کہناہے 60 کی دہائی میں یہ خاتون ایک ڈانسر تھی جسے قتل کر کے اس کی

لاش کو اس سڑک پر چھوڑ دیا گیا جو کہ کارساز کے نام سے مشہور ہے۔جو کہ یہاں سے

گزرنے والوں کو مدد کیلئے رکنے کو کہتی ہے اور اچانک غائب ہو جاتی ہے جبکہ اکثر لوگ

اسے یہاں رات کے وقت بھٹکتے ہوئے دیکھ چکے ہیں۔

موہٹہ پیلیس

موہٹہ پیلیس ایک کاروباری شخصیت کا گھر تھا جہاں وہ گرمیوں میں قیام کرتا تھا۔برطانوی

راج کے دوران ہی اس شخصیت کا انتقال ہو گیا تھا۔ کہا جاتا ہے کہ تب سے اس کی روح

اکثر اس پیلیس میں آتی رہتی ہے۔ یہاں سیاحوں کی رہنمائی کرنے والے گائیڈز کا مبینہ طور

پر کہنا ہے کہ اس پیلیس میں مختلف چیزیں خود بخود ایک جگہ سے دوسری جگہ منتقل

ہوتی رہتی ہیں۔پیلیس کے گارڈز کا دعویٰ ہے کہ انہیں رات کے وقت پیلیس میں کسی روح

کی موجودگی کا احساس ہوتا ہے۔

کوہ چلتن

کوہ ”چلتن“ کا اصل نام ”چہل تن“ ہے جس کے معنی ”چالیس جسم“ کے ہیں۔ایک مقامی داستان کے مطابق کوہ چلتن کے چوٹی پر 40بچوں کی روحیں رہتی ہیں۔

When someone dies in the grip of a powerful rage… a curse is born. The curse gathers in the place of death. Those who encounter it die, and a new curse is born.

Don't be scare

People are dead but they just don't know they are dead. :O 

+ Click Here To Join also Our facebook study Group.

..How to Join Subject Study Groups & Get Helping Material?..

..How to become Top Reputation, Angels, Intellectual, Featured Members & Moderators?..


See Your Saved Posts Timeline

Views: 1673

.

+ http://bit.ly/vucodes (Link for Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution)

+ http://bit.ly/papersvu (Link for Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More)

+ Click Here to Search (Looking For something at vustudents.ning.com?)

Reply to This

Replies to This Discussion

wow nice info,

magr toba hy itni khofnak ..kiu bacho ko drana hy 

Keep sharing! :)

GH Ma'am  yeh shab jhoot hy na ????

hahaha ye jhot nahi ha, but u isy nahi dekho achaw kahen dal na jana lat ko. 

jhot hi hy

na na na chanda manda ye 200% sach hy 

ni ni nii ni ni ni jhoot hy jhoot hy jhoot hy jhooooot hy :'( :'( me bol dia such hy to phil neno ni aye gi , u bhi bolo jhoot hy :'( :'(

la la la la laaaaaa :P alyy meliiii chanduuu a neno klaooo :P lori suna hy 

hide otty GH Ma'am Yap umm*umm*

:rose:rose:rose:rose

hahahahahaha, chandu aik bat bataon ma b bhoot hon. :O

Allow me to introduce  myself,

 I m the count Viladish Dragulia. :O

Born 1615 murdered 1649 huhu haha

But I managed to escape I m still alive and wondering. :O 

most of these haunted places were visitied by Woh Kia Hai Team... Specially the Shamshan Ghat in hyderabad is most haunted places they visitied twise i guess....

hmm that's good information nomi. thank you. 

Wolve Shil gando

agl me rat ko neno main dal gai to u pe case klna me ny

RSS

Latest Activity

© 2019   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service