We have been working very hard since 2009 to facilitate in learning Read More. We can't keep up without your support. Donate.

مری جان

دشت سلوک میں

مجھے جس مقام پہ چھوڑ کر

یہ سفال رابطہ توڑ کر

ذرا آگ لینے گئے تھے تم

میں رکا ہوا ہوں اسی جگہ

سر مو بھی آگے بڑھا نہیں

مری جان

مجھ پہ یہ بار ہیں

مرے آئنے کا غبار ہیں

یہ تمہارے ریشمی تار ہیں

یہ تمہاری سوزن سیم ہے

یہ مری وہ سادہ گلیم ہے

کوئی پھول جس پہ کڑھا نہیں

مری جان

تم سے نہیں گلہ

یہ نصیب کا ہے معاملہ

مرے وقت ہی میں لکھا نہ تھا

کہ تمہارے خرکۂ خاص کا

کوئی رنگ دل پہ چڑھا نہیں

Views: 62

Replies to This Discussion

Ahan nice

amzing

Thanks. 

Ary wah .. ^_^

kamal

Shukran jee. 

jitna samjh aya acha tha itni gahri urdu mat likha kry haxan :-P

Alan shukar hy kuch to smj i apko :P 

RSS

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service