We are here with you hands in hands to facilitate your learning & don't appreciate the idea of copying or replicating solutions. Read More>>

Looking For Something at vustudents.ning.com? Click Here to Search

www.bit.ly/vucodes

+ Link For Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution

www.bit.ly/papersvu

+ Link For Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More


Dear Students! Share your Assignments / GDBs / Quizzes files as you receive in your LMS, So it can be discussed/solved timely. Add Discussion

How to Add New Discussion in Study Group ? Step By Step Guide Click Here.

واقعہ کربلا اور افسانہ کربلا

واقعہ کربلا اور افسانہ کربلا

بسم الله الرحمن الرحیم
سب طرح کی تعریفیں الله رب العلمین کے لئے ہیں . الله ایک ہے . الله کا کوئی شریک نہیں . الله پاک ہے .الله بے نیاز ہے . سب الله کے محتاج ہیں . اور درود و سلام ہو الله کے پیغمبروں پر
امابعد
جیسا کہ آج کل فرقہ واریت عام ہو چکی ہے . اس امّت محمدی کے اندر بہت سے فرقے بن چکے ہیں . آج ہر فرقہ گمراہی میں مبتلا ہے اور اس کی وجہ الله کی نازل کردہ شریعت کو چھوڑ کر اپنے باپ دادا یا اپنے خود ساختہ عقائد بنا کر خود ساختہ مذاہب پر چلنا ہے .اور جو الله اور رسول کی نافرمانی کرتا ہے تو الله فرماتا ہے :وَمَنْ يُّشَاقِقِ الرَّسُوْلَ مِنْۢ بَعْدِ مَا تَبَيَّنَ لَهُ الْهُدٰى وَيَتَّبِعْ غَيْرَ سَبِيْلِ الْمُؤْمِنِيْنَ نُوَلِّهٖ مَا تَوَلّٰى وَنُصْلِهٖ جَهَنَّمَ ۭ وَسَاۗءَتْ مَصِيْرًا
اورجوخلاف کرے رسول کے اس کے بعد کہ واضح ہوجائے اس پر ہدایت اور وہ پیروی کریں مومنوں کے راستے کے علاوہ کی ہم پھیر دیں گے اسے جدھر وہ پھرے گا اورہم داخل کریں گے اسے جہنم میں اور وہ بہت براٹھکانہ ہے۔
سورة النساء آیت 115
مومنوں کا راستہ بھی الله نے قرآن میں بتا دیا ہے .الله فرماتا ہے "وَمَنْ يُّطِعِ اللّٰهَ وَالرَّسُوْلَ فَاُولٰۗىِٕكَ مَعَ الَّذِيْنَ اَنْعَمَ اللّٰهُ عَلَيْهِمْ مِّنَ النَّبِيّٖنَ وَالصِّدِّيْقِيْنَ وَالشُّهَدَاۗءِ وَالصّٰلِحِيْنَ ۚ وَحَسُنَ اُولٰۗىِٕكَ رَفِيْقًا
اور جو کوئی اطاعت کرے گا اللہ کی اور رسول (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) ‘ کی تو یہ وہ لوگ ہوں گے جنہیں معیت حاصل ہوگی ان کی جن پر اللہ کا انعام ‘ ہوا یعنی انبیاء کرام ‘ صدیقین ‘ شہداء اور صالحین اور کیا ہی اچھے ہیں یہ لوگ رفاقت کے لیے
سورة النساء آیت 69
تو مومنوں کا راستہ الله اور رسول کی فرمابرداری ہے . آج امّت میں موجود فرقوں میں سے اکثر ایسے فرقے ہیں جو کہ گزرے ہوئے لوگوں کی طرف منسوب باتوں میں ہی سر مارتے پھرتے ہیں . یہ فرقے ان چیزوں کے پیچھے اپنے اعمال برباد کر رہے ہیں جن کے متعلق ان سے پوچھا تک نہیں جانا . انہی باتوں میں سے ایک واقعہ کربلا ہے . اس واقعہ کے متعلق صحیح احادیث بہت کم ہیں . اس واقعہ پر مختلف فرقوں کے لوگوں نے کتابیں لکھیں جن میں کوئی بات سند سے بیان نہیں . یہ واقعہ سند سے ابن جریر طبری نے صرف بیان کیا اور ان کی تقریباً تمام سندوں کا راوی کذاب افسانہ نگار تھا . اس مصنف کے متعلق اوپر تصویر میں تفصیل سے بات موجود ہے . اب ایک بات غور طلب ہے کہ فرقہ پرست لوگ اس چیز کے پیچھے باگتے ہیں جس کے متعلق ان سے نہیں پوچھا جانا . الله تعالٰی نے قرآن میں گزرے ہوئے لوگوں کے متعلق واضح بتا دیا :تِلْكَ اُمَّةٌ قَدْ خَلَتْ ۚ لَهَا مَا كَسَبَتْ وَلَكُمْ مَّا كَسَبْتُمْ ۚ وَلَا تُسْـــَٔــلُوْنَ عَمَّا كَانُوْا يَعْمَلُوْنَ
یہ ایک جماعت تھی جو گزر چکی ان کے لیے تھا جو انہوں نے کمایا اور تمہارے لیے ہوگا جو تم کماؤ گے تم سے یہ نہیں پوچھا جائے گا کہ وہ کیا کرتے تھے ۔
سورة البقرہ آیت 134
لیکن فرقہ پرستوں نے بغیر تحقیق کے اپنے باپ دادا کی تقلید کرتے ہوئے الله کی شریعت کو چھوڑ دیا اور خود ساختہ مذاہب بنا کر اسلام سے خود کو علیحدہ کر لیا اور فرقے فرقے ہو گئے . ایک فرقہ جو خود کو شیعہ کے نام سے منسوب کرتا ہے اس نے بھی جب الله کی شریعت کا کفر کیا تو وہ ایسا گمراہ ہوا کہ دنیا میں بھی اپنے ہی ہاتھوں ، اپنے آپ کو زخمی کرتا ہے اور ان شا الله آخرت میں جہنم کا ایندھن بنے گا . اس گروہ کو یہ حدیث پڑھ لینی چاہیے
حَدَّثَنِا ثَابِتُ بْنُ مُحَمَّدٍ حَدَّثَنَا سُفْيَانُ عَنْ الْأَعْمَشِ عَنْ عَبْدِ اللَّهِ بْنِ مُرَّةَ عَنْ مَسْرُوقٍ عَنْ عَبْدِ اللَّهِ رَضِيَ اللَّهُ عَنْهُ عَنْ النَّبِيِّ صَلَّی اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ ح وَعَنْ سُفْيَانَ عَنْ زُبَيْدٍ عَنْ إِبْرَاهِيمَ عَنْ مَسْرُوقٍ عَنْ عَبْدِ اللَّهِ عَنْ النَّبِيِّ صَلَّی اللَّهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ قَالَ لَيْسَ مِنَّا مَنْ ضَرَبَ الْخُدُودَ وَشَقَّ الْجُيُوبَ وَدَعَا بِدَعْوَی الْجَاهِلِيَّةِ

صحیح بخاری:جلد دوم:حدیث نمبر 778
ثابت بن محمد سفیان اعمش عبداللہ بن مرہ مسروق حضرت عبداللہ بن مسعود (رض) سے روایت کرتے ہیں کہ رسالت مآب (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) نے ارشاد فرمایا ہے کہ جو شخص (غمی و ماتم میں) اپنے رخساروں کو پیٹے اور گریبان پھاڑے اور جاہلیت کے لوگوں کی طرح گفتگو کرے تو وہ ہم میں سے نہیں ہے۔
ابھی بھی وقت ہے فرقہ واریت چھوڑ کر مسلم بن جاؤ ورنہ پچھتاوے کے سوا آخرت میں کچھ ہاتھ نہ آئے گا .جو لوگ گزر چکے ان کو چھوڑو اور اپنے عقیدے ٹھیک کرو . نوحے سے بعض آ جاؤ . حَدَّثَنَا أَبُو بَکْرِ بْنُ أَبِي شَيْبَةَ حَدَّثَنَا عَفَّانُ حَدَّثَنَا أَبَانُ بْنُ يَزِيدَ ح و حَدَّثَنِي إِسْحَقُ بْنُ مَنْصُورٍ وَاللَّفْظُ لَهُ أَخْبَرَنَا حَبَّانُ بْنُ هِلَالٍ حَدّ

  • photo

Comment

You need to be a member of Virtual University of Pakistan to add comments!

Join Virtual University of Pakistan

© 2020   Created by +M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service

.