We have been working very hard since 2009 to facilitate in your learning Read More. We can't keep up without your support. Donate Now.

www.bit.ly/vucodes

+ Link For Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution

www.bit.ly/papersvu

+ Link For Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More

+!!!StRaNGeR!!! +'s Blog (34)

جاناں

میں نے اس طور سے چاہا تجھے اکثر جاناں

جیسے ماہتاب کو انت سمندر چاہے

جیسے سورج کی کرن سیپ کے دل میں اترے

جیسے خوشبو کو ہوا رنگ سے ہٹ کر چاہے

جیسے پتھر کے کلیجے سے کرن پھوٹتی ہے

جیسے غنچے کھلے موسم سے حنا مانگتے ہیں

جیسے خوابوں میں خیالوں کی کماں ٹوٹتی ہے

جیسے بارش کی دعا آبلہ با مانگتے…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on July 23, 2020 at 8:32am — 2 Comments

پیار سے مانگو گے َلٹا بھی دیں گے

پیار سے جان جو مانگو گے لٹا بھی دیں گے

آنکھ جو ہم کو دکھائی تو مٹا بھی دیں گے

ہم محبت کے پجاری ہیں سنو بزم سے اپنی

بات نفرت کی کروگے تو اُٹھا بھی دیں گے

کوئی لایا ہے زمیں پر کبھی سورج اب تک

ہاں کہوگے تو دیا کوئی جلا بھی دیں گے

ویسے امن پسند ہیں پر ہم سروں کو اپنے

حرف ایماں پہ جو آیا تو کٹا بھی دیں گے

آگ ہیں ہم دوری ہم سے تم بنائے رکھنا

پاس آئے راکھ کر تم کو اُڑا بھی دیں گے

پہلے جمیل…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on June 11, 2020 at 6:28pm — 1 Comment

شام غم کی سحر نہیں ہوتی

شام غم کی سحر نہیں ہوتی

یا ہمیں کو خبر نہیں ہوتی

ہم نے سب دکھ جہاں کے دیکھے ہیں

بیکلی اس قدر نہیں ہوتی

نالہ یوں نارسا نہیں رہتا

آہ یوں بے اثر نہیں…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on April 15, 2020 at 3:11am — 3 Comments

وہ بلائیں تو کیا تماشا ہو ہم نہ جائیں تو کیا تماشا ہو یہ کناروں سے کھیلنے والے ڈوب جائیں تو کیا تماشا ہو بندہ پرور جو ہم پہ گزری ہے ہم بتائیں تو کیا تماشا ہو آج ہم بھی تری وفاؤں پر مسکرائیں تو کیا…

وہ بلائیں تو کیا تماشا ہو

ہم نہ جائیں تو کیا تماشا ہو

یہ کناروں سے کھیلنے والے

ڈوب جائیں تو کیا تماشا ہو

بندہ پرور جو ہم پہ گزری…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on April 15, 2020 at 3:10am — No Comments

دل کا

ان کے انداز کرم ، ان پہ وہ آنا دل کا

ہائے وہ وقت ، وہ باتیں ، وہ زمانا دل کا

نہ سنا اس نے توجہ سے فسانا دل کا

زندگی گزری ، مگر درد نہ جانا دل کا

کچھ نئی بات نہیں حسن پہ آنا دل کا

مشغلہ ہے یہ نہایت ہی پرانا دل کا

وہ محبت کی شروعات ، وہ بے تھاشہ خوشی

دیکھ کر ان کو وہ پھولے نہ سمانا دل کا

دل لگی، دل کی لگی بن کے مٹا دیتی ہے

روگ دشمن کو بھی یارب ! نہ لگانا دل کا

ایک تو میرے مقدر کو بگاڑا اس نے

اور پھر اس پہ غضب ہنس کے بنانا دل…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on April 14, 2020 at 3:05am — 1 Comment

اچھا ہے

حسن مہ گرچہ بہ ہنگام کمال اچھا ہے

اس سے میرا مہہ خورشید جمال اچھا ہے

بوسہ دیتے نہیں اور دل پہ ہے ہر لحظہ نگاہ

جی میں کہتے ہیں کہ مفت آئے تو مال اچھا ہے

اور بازار سے لے آئے اگر ٹوٹ گیا

ساغر جم سے مرا جام سفال اچھا ہے

بے طلب دیں تو مزا اس میں سوا ملتا ہے

وہ گدا جس کو نہ ہو خوئے سوال اچھا ہے

ان کے دیکھے سے جو آ جاتی ہے منہ پر رونق

وہ سمجھتے ہیں کہ بیمار کا حال اچھا ہے

دیکھیے پاتے ہیں عشاق بتوں سے کیا فیض

اک برہمن نے کہا ہے کہ یہ سال اچھا ہے…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on April 14, 2020 at 3:05am — No Comments

فنا کا سفر

فنا کا سفر اس کی خواہش کا اظہار معصوم حد تک روایت کی بندش میں الجھا ہوا تھا کہ میں اس کے ہاتھوں پہ مہندی لگاؤں مگر شاعری ایک دیوی ہے جس کی جلن کو کبھی لکھنے والوں کے ہاتھوں پہ اتنا ترس ہی نہیں آسکا ہے کہ باغی دماغوں میں بھی عام رستوں کی تقلید بھرتی یا ہاتھوں کی جنبش، خرد کے تسلط سے آزاد کر تی مرے ہاتھ بھی ذہن میں گھومتے کچھ سوالوں کے سانچے بنانے لگے اس کے ہاتھوں پہ مہندی سے ایٹم کے ماڈل بنانے لگے اور ماڈل بھی ایسے جو متروک تھے جس میں ذرہ بہت دور سے گھومتا جھومتا دائرہ دائرہ رفتہ رفتہ کسی…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on March 26, 2020 at 4:22pm — 1 Comment

آرزو کو دل ہی دل میں گھٹ کے رہنا آ گیا

آرزو کو دل ہی دل میں گھٹ کے رہنا آ گیا اور وہ یہ سمجھے کہ مجھ کو رنج سہنا آ گیا پونچھتا کوئی نہیں اب مجھ سے میرا حال دل شاید اپنا حال دل اب مجھ کو کہنا آ گیا سب کی سنتا جا رہا ہوں اور کچھ کہتا نہیں وہ زباں ہوں اب جسے دانتوں میں رہنا آ گیا زندگی سے کیا لڑیں جب کوئی بھی اپنا نہیں ہو کے شل دھارے کے رخ پر ہم کو بہنا آ گیا لاکھ پردے اضطراب شوق پر ڈالے مگر پھر وہ اک مچلا ہوا آنسو برہنا آ گیا تجھ کو اپنا ہی لیا آخر نگار عشق نے اے عروس چشم لے موتی کا گہنا آ گیا پی کے آنسو سی کے لب بیٹھا ہوں یوں اس…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on February 20, 2020 at 7:58am — 4 Comments

میں نے اس طور سے تجھے چاہا

"میں نے اس طور سے تجھے چاہا اکثر جیسے مہتاب کو بے انت سمندر چاہے جیسے سورج کی کرن سیپ کے دل میں اترے جیسے خوشبو کو ہوا رنگ سے ہٹ کر چاہے جیسے پتھر کے کلیجے سے کرن پھوٹتی ہے جیسے غنچے کھلے موسم سے حنا مانگتے ہیں جیسے خوابوں میں خیالوں کی کمان ٹوٹتی ہے جیسے بارش کی دعا آبلہ پا مانگتے ہیں مرا ہر خواب مرے سچ کی گواہی دے گا وسعت دید نے تجھ سے تری خواہش کی ہے مری سوچوں میں کبھی دیکھ سراپا اپنا میں نے دنیا سے الگ تیری پرستش کی ہے خواہش دید کا موسم کبھی ہلکا جو ہوا نوچ ڈالی ہیں زمانوں کی نقابیں میں…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on December 22, 2019 at 4:42am — 1 Comment

چل پیر سائیں کوئی آیّت پُھونک.

چل پیر سائیں کوئی آیّت پُھونک.

کوئی ایسا اِسمِ اعظم پڑھ.

وہ آنکھیں میری ہو جائیں.

کوئی صوم صلوٰۃ دُرُود بتا.

کہ وجّد وُجُود میں آ جائے.

کوئی تسبیح ہو کوئی چِلا ہو.

کوئی وِرد بتا وہ آن ملے.

مُجھے جینے کا سامان ملے.

گر نہیں تو میری عرضی مان.

مُجھے مانگنے کا ہی ڈھنگ سِکھا.

کہ اشّک بہیں میرے سجّدوں میں.

اور ہونٹ تھرا تھر کانپیں بّس.

میری خاموشی کو بھّید مِلے.

کوئی حرف ادا نہ ہو لیکن.

میری ہر اِک آہ کا شور…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on November 3, 2019 at 1:14am — 2 Comments

غازی علم دین ؛

غازی علم دین ؛

یہ تھا لاہور کا رہائشی 19سالہ غازی علم دین پیشے کے لحاظ سے ایک بڑھئی تھا۔ تقسیم ہند سے پہلے انڈیا میں ہونے والے ایک واقعہ نے علم دین کی زندگی میں ہلچل برپا کردی۔ 1923 میں ایک انتہا پسند ہند و نے رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی شان میں ایک نہایت گستاخانہ کتاب کے نام سے تحریر کی۔ یہ کتاب ایک فرضی نام سے لکھی گئی جسے لاہور کے ایک ہندو پبلشر راجپال نے شائع کیا۔ کتاب میں انتہائی نازیبا باتیں درج تھیں جنہیں کوئی بھی مسلمان برداشت نہیں کرسکتا تھا۔ کتاب کی اشاعت سے پورے برصغیر کے…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on November 3, 2019 at 1:11am — 1 Comment

ظرف سوائے کمینگی کے اور کچھ نہیں دے سکتا

ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ ایک باز شکار کی تلاش میں اڑتا پھر رہا تھا اچانک اس کی نظر نیچے پڑی تو دیکھ کر بہت حیران ہوا کہ ایک شیر ایک بکری کو اپنی پشت پر بیٹھا کر سیر کروا رہا ہے اور تازہ تازہ گھاس بکری کو خود کھلا رہا ہے بکری بڑے مزے سے بنا ڈرے شیر کی سواری سے لطف اندوز ہو رہی ہے ماجرا حیران کن تھا باز نے اپنی حیرانی دور کرنے کا فیصلہ کر لیا جب شیر بکری کو اتار کر ادھر ادھر ہوا تو باز بکری کے پاس آیا اور سوال کیا بی بکری یہ کیا ماجرا ہے ؟؟ شیر تو تمہارا سب سے بڑا دشمن ہے مگر وہ تمہیں اتنا پیار…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on October 26, 2019 at 7:44am — No Comments

کہاں کا عشق کہاں کی محبتیں مُرشِ

کہاں کا عشق کہاں کی محبتیں مُرشِد۔۔۔ تمام عُمر ہی جھیلی ہیں وحشتیں مُرشِد ہم ایسے لوگ کہاں راس آ سکے سب کو۔۔۔ کہ جن پہ بار ہیں اپنی طبیعتیں مُرشِد سَروں کی خاک ہمیں کھینچ لائی ہے ورنہ۔۔۔ کہاں کا ہِجر کہاں کی یہ ہِجرتیں مُرشِد وہ کون لوگ تھے گُمنامیوں سے نالاں تھے۔۔۔ ہمیں تو مار گئی ہیں یہ شُہرتیں مُرشِد کسی کو ٹُوٹ کے چاہیں کسی کو یاد کریں۔۔۔ ہمارے پاس کہاں اِتنی فُرصتیں مُرشِد کوئی تو ہوتا جو چُنتا وجود کے ریزے۔۔۔ تمام عُمر رہی ہیں یہ حسرتیں مُرشِد کوئی وظیفہ کوئی وِرد کوئی اِسم پڑھیں۔۔۔ کہ…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on October 25, 2019 at 8:05am — No Comments

جاپان کے دارالحکومت ٹوکیو میں ایک شخص ٹیکسی میں سوار ہوا تو کیا ہوا

جاپان کے دارالحکومت ٹوکیو میں ایک شخص ٹیکسی میں سوار ہوا تو کیا ہوا؟ زبان نہ آنے کی وجہ سے زیادہ بات تو نہ کر سکا، بس اس انسٹیٹوٹ کا نام لیا جہاں اسے جانا تھا، ٹیکسی ڈرائیور سمجھ گیا، اس نے سر جھکایا اور مسافر کو دروازہ کھول کر بٹھایا۔ اس طرح بٹھانا ان کا کلچر ہے۔ سفر کا آغاز ہوا تو ٹیکسی ڈرائیور نے میٹر آن کیا، تھوڑی دیر کے بعد بند کر دیا اور پھر تھوڑی دیر بعد دوبارہ آن کر دیا، مسافر حیران تھا مگر زبان نہ آنے کی وجہ سے چپ رہا، جب انسٹیٹوٹ پہنچا تو استقبال کرنے والوں سے کہنے لگا، پہلے تو آپ…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on October 25, 2019 at 8:04am — 1 Comment

*موہے پیر پایوں نظام الدین اولیا *

*موہے پیر پایوں نظام الدین اولیا *

کہتے ہیں کہ ایک دن ایک سید زادہ حضرت نظام الدین اولیاء کی خدمت میں حاضر ہوا

.

اور عرض کی "یا حضرت میں ایک غریب سید زادہ ہوں اور سر پر جوان بیٹیوں کا بوجھ ہے۔۔ سادات گھرانے کی نسبت ہونے کی وجہ سے زکوٰۃ بھی نہیں لے سکتا۔ آپ میرے دینی بھائی ہیں اور سید بھی ہیں آپ میری مدد کریں کچھ۔"

.

آپ نے اس کو عزت و تکریم کے ساتھ بٹھایا اور خادم سے بلا کر کہا کہ آج کوئی نذر و نیاز آئی خانقاہ میں؟ تو خادم نے عرض کی "سیدی ابھی تک تو کوئی نہیں آئی لیکن…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on October 25, 2019 at 8:01am — No Comments

ایک بوڑھے آدمی کو اسکی اولاد

ایک بوڑھے آدمی کو اسکی اولاد ہر روز یہ طعنہ دیتی کہ آپ نے ہمارے لئے کیا بنایا ہے ۔۔۔ بابا جی یہ سن کر خاموش ہو جاتے ۔۔۔ اگلی صبح پھر اسی بحث کو لیکر بچے اپنے بوڑھے باپ کا جینا حرام کرتے اور بیچارہ بوڑھا صبر کے ساتھ اپنی اولاد کے اس طعنے کو سہتا بھی اور سنتا بھی لیکن خاموش رہتا ۔۔۔ جب موت کا وقت قریب آیا اور بوڑھا بستر مرگ پر لیٹ گیا تو جاتے جاتے اپنے بچوں کو ایک کاغذ دے گیا جس پر لکھا تھا " اس گھر کے نیچے میری عمر بھر کی جمع پونجی ہے ۔۔۔ بھاری خزانہ ہے ۔۔۔ کھود کر نکال لینا " ۔۔۔۔ یہ پڑھنا…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on October 24, 2019 at 7:19am — No Comments

کی جاناں میں کون

یہ میں نے کہہ تو دیا تجھ سے عشق ہے مجھ کو تراہی در مری آوارگی کا محور ہے تجھی سے رات کی مستی تجھی سے دن کا خمار تجھی سے میری رگ و پے میں زہرِ احمر ہے تجھی کو میں نے دیا اختیار گریے پر یہ چشم خشک اگر ہے، یہ چشم اگر تر ہے ترا ہی حسم چمن ہے ترا ہی جسم بہار تری ہی زلف سے ہر آرزو معطّر ہے ترا ہی حسن ہے فطرت کا آخری شاہکار کہ جو ادا ہے وہ تیری ادا سے کمتر ہے یہ میں نے کہہ تو دیا تجھ سے عشق ہے لیکن مرے بیان میں اک لزرشِ خفی بھی ہے تو میرے دعویٰء الفت کی آن پر مت جا کہ اس میں ایک ندامت دبی دبی بھی…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on October 17, 2019 at 9:46am — No Comments

سر پلیز....

c

مجهے ایک بات بتائیے...

وہ میرے سامنے میز کی دوسری طرف بیٹھ کر بڑے اعتماد سے بولی...

جو عورت پچهلے پانچ سال سے آپ کے ساتھ ہے اور آپ کے دو بچوں کی ماں بهی ہے اس میں اچانک ایسی کیا برائی کیا خرابی یا کمی واقع ہو گئی کہ آپ اس کی ساری محبتیں خدمتیں اور قربانیاں بهلا کر میری طرف مائل ہو گئے؟....

ایسا کچھ بهی نہیں بات صرف اتنی سی ہے کہ مجهے تم سے محبت ہے....

اور آپ نے اس محبت کو ملکیت سمجھ لیا مجهے بتاے بغیر مجھ سے پوچهے بغیر....

پوچھ تو رہا ہوں تم مان جاو میں اسے چهوڑ دوں…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on October 10, 2019 at 10:32am — No Comments

قیامت کے دن لوگوں کو ان کے اور ان کے والد کے نام سے پکارا جائے گا

حدیث شریف میں ہے کہ قیامت کے دن لوگوں کو ان کے اور ان کے والد کے نام سے پکارا جائے گا، چناں چہ حضرت ابودرداء رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے منقول ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: قیامت کے دن تم کو تمہارے اور تمہارے باپ کے ناموں سے پکارا جائے گا لہذا تم اپنے اچھے نام رکھو۔ [مسنداحمد، سنن ابیداؤد] (مشکاۃ، ص:408) البتہ حضرت عیسی علیہ الصلوۃ والسلام کو چوں کہ اللہ تعالیٰ نے اپنی قدرت کاملہ سے بغیر والدکے حضرت مریم رضی اللہ عنہا کے بطن مبارک سے پیدافرمایاتھا؛اس لیے انہیں والدہ کی جانب منسوب…

Continue

Added by +!!!StRaNGeR!!! + on October 10, 2019 at 10:26am — No Comments

Looking For Something? Search Here

HELP SUPPORT

This is a member-supported website. Your contribution is greatly appreciated!

© 2020   Created by +M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service

.