We are here with you hands in hands to facilitate your learning & don't appreciate the idea of copying or replicating solutions. Read More>>

Looking For Something at vustudents.ning.com? Click Here to Search

www.bit.ly/vucodes

+ Link For Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution

www.bit.ly/papersvu

+ Link For Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More


گھر کے آنگن میں ایک بیل اگی ہوئی تھی مکان کی مرمت ہوئی تو وہ نیچے دب گئی - آنگن کی صفائی کراتے ہوئی مالک مکان نے بیل کو کٹوا دیا ، دور تک کھود کر اس کی جڑیں بھی نکلوا دی گئیں
اس کے بعد پورے صحن کو اینٹوں سے پختہ کر دیا گیا ، کچھ عرصہ بعد بیل کی سابقہ جگہ کے پاس ایک نیا واقعہ رونما ہوا ، پختہ اینٹیں ایک مقام پر ابھر آئیں ، ایسا معلوم ہوتا تھا کہ کسی نے دھکا دے کر انھیں اٹکا دیا ہے ، کسی نے کہا کہ یہ چوہوں کی کاروائی ہے کسی نے کوئی اور قیاس کرنے کی کوشش کی آخر کار اینٹیں ہٹائی گئیں تو معلوم ہوا کہ بیل کا پودا اس کے نیچے مڑی ہوئی شکل میں موجود ہے -
بیل کی کچھ جڑیں زمین کی نیچی رہ گئیں تھیں ، وہ بڑھ کر سیمنٹ تک پہنچیں اور اوپر آنے کے لئے زور کر رہیں تھیں - 

یہ پتیاں جن کو مسلا جائے تو تو وہ آٹے کی طرح پس اٹھیں ان کے اندر اتنی طاقت ہے کہ اینٹ کے فرش کو طور کر اوپر آ جائیں - 

مالک مکان نے کہا " میں ان کی راہ میں حائل نہیں ہونا چاہتا ، اگر یہ بیل مجھ سے دوبارہ زندگی کا حق مانگ رہی ہے تو میں اس کو زندگی کا حق دوں گا - " 
" جناب ! انھوں نے چند اینٹیں نکلوا کر اس کے لئے جگہ بنا دی - ایک سال بعد ٹھیک اسی جگہ پر ١٥ فٹ اونچی بیل کھڑی ہوئی تھی جہاں اس کو ختم کر کے اس کے اوپر پختہ اینٹیں جوڑ دی گئیں تھیں - " 

درخت کے ننھے پودے میں اتنا زور ہے کہ وہ پتھر کے فرش کو دھکیل کر باہر آجاتا ہے ، یہ طاقت اس کے اندر کہاں سے عالم فطرت کا وہ پر اسرار مظہر ہے جس کو زندگی کہا جاتا ہے ایسی قوت جو دنیا میں اپنا حق وصول کر کے رہتی ہے -
جب زندگی کی جڑیں تک کھودی جاتی ہیں اس وقت بھی وہ کہیں نہ کہیں اپنا وجود رکھتی ہے اور موقع پاتے ہی دوبارہ ظاہر ہو جاتی ہے - 

از مولانا وحید الدین " راز حیات "

+ Click Here To Join also Our facebook study Group.

+ How to Join Subject Study Groups & Get Helping Material?

+ How to become Top Reputation, Angels, Intellectual, Featured Members & Moderators?


See Your Saved Posts Timeline

Views: 77

.

+ http://bit.ly/vucodes (Link for Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution)

+ http://bit.ly/papersvu (Link for Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More)

+ Click Here to Search (Looking For something at vustudents.ning.com?)

Comment

You need to be a member of Virtual University of Pakistan to add comments!

Join Virtual University of Pakistan

Comment by + .• муѕтєяισυѕ gιяℓ •.+ on October 31, 2013 at 7:39pm

tahnks sis

Comment by + .• муѕтєяισυѕ gιяℓ •.+ on October 31, 2013 at 7:39pm

thanks for approved

Comment by Binte Ahmed on October 31, 2013 at 7:34pm

nice post..

Comment by Binte Ahmed on October 31, 2013 at 7:34pm

Approved ..!!!

Latest Activity

+ ՏhehαrZααD + posted discussions
28 minutes ago
M +S +K posted a status
"Mohabbat Bande Ko Khuda Tak Le Jaati Hai, Mil Jaye Tab Bhi Aur Na Mile Tab Bhi"
41 minutes ago
M +S +K posted a status
"Hum Mohabbat Mein Darakhton Ki Tarah Hain, Jahan Lag Jayein Muddaton Wahin Khare Rehte Hain"
41 minutes ago
M +S +K posted a status
"Ab Chor Diya Hai Ishq Ka School Hum Ne Bhi, Hum Se Ab Mohabbat Ki Fees Adaa Nahi Hoti"
42 minutes ago
M +S +K posted a status
"Ussey Kaho Ab Toh Humein Malkiyat De Dey Apni, Arsa Beet Gaya Hai Mohabbat Ki Qistein Bharte Bharte"
43 minutes ago
M +S +K posted a status
"Mujhe Chor Kar Woh Khush Hai Toh Shikyata Kaisi, Ab Main Ussey Khush Bhi Na Dekhun Toh Mohabbat Kaisi"
44 minutes ago
M +S +K posted a status
"Woh Shaks Kabhi Mohabbat Nahi Kar Sakta, Jo Dil Ki Baatein Bhi Dimagh Se Sochta Hai"
45 minutes ago
M +S +K posted a status
"Mohabbat Ke Andaz Bhi Juda Juda Hain Saghar, Kisi Ne Toot Ke Chaha Aur Koi Chah Ke Toot Gaya"
45 minutes ago

© 2019   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service