Latest Activity In Study Groups

Join Your Study Groups

VU Past Papers, MCQs and More

We non-commercial site working hard since 2009 to facilitate learning Read More. We can't keep up without your support. Donate.

ساون کے اس موسم میں
کیا معلوم، کب، کس جگہ پر؟
بادل گرجے، بارش برسے
چھتری ساتھ میں رکھ لیتا ہوں
نکلوں میں جب بھی گھر سے
لیکن اکثر یوں ہوتا ہے
جھٹ سے بادل آ جاتے ہیں
جھٹ سے بارش ہو جاتی ہے
چھتری کھلنے سے پہلے ہی
بارش مجھے بھگو جاتی ہے
تم بھی اکثر یوں کرتے ہو
کیا معلوم، کب، کس جگہ پر؟
اچانک ہی سے آ جاتے ہو
ہر بار میری سنے بنا ہی
اپنا سب سنا جاتے ہو
بادل سا گرج جاتے ہو
ساون سا برس جاتے ہو
تم آنکھیں بھگو جاتے ہو
اس سے پہلے کہ کچھ بولوں
تم اپنے رستے ہو جاتے ہو
اور میرے لب اس چھتری جیسے
کھلتے کھلتے رہ جاتے ہیں
ہر بار کے جیسے میرے شکوے
اشکوں کے سنگ بہہ جاتے ہیں

Views: 227

Comment

You need to be a member of Virtual University of Pakistan to add comments!

Join Virtual University of Pakistan

Comment by Muhammad Ehtasham on September 12, 2017 at 3:07pm

واہ کیا بات ہے

Looking For Something? Search Below

Latest Activity

VIP Member Badge & Others

How to Get This Badge at Your Profile DP

------------------------------------

Management: Admins ::: Moderators

Other Awards Badges List Moderators Group

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service