We have been working very hard since 2009 to facilitate in your learning Read More. We can't keep up without your support. Donate Now.

www.bit.ly/vucodes

+ Link For Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution

www.bit.ly/papersvu

+ Link For Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More


اس نے کہا: تم "بے نیاز" ہوجاو۔۔ جیسے خدا "بے نیاز" ہے
میں نے کہا: میں خدا نہیں۔۔ انسان ہوں
اس نے کہا: یقینا انسان خدا نہیں ہے۔ وہ محدود ہے۔۔ لیکن وہ خدا کی کئی صفات کو اپنا کر اپنی شخصیت سنوار سکتا ہے۔۔ جیسے خدا رحم فرماتا ہے۔۔ انسان بھی رحم کرسکتا ہے۔ 
میں نے کہا: لیکن انسان کے رحم کرنے میں اور خدا کی صفت رحمت میں بہت بڑا فرق ہے
اس نے کہا: فرق ہے۔۔ ایک سمندر اور ندی میں جتنا فرق ہے اس سے بھی زیادہ بڑا فرق ہے لیکن دونوں میں بہتا تو پانی ہی ہے نا۔ 
میں نے کہا: کیا انسان خدا کی طرح بے نیاز ہوسکتا ہے؟ 
اس نے کہا: تم بے نیازی کو سمجھتے کیا ہو؟
میں نے چند لمحے سوچ کر کہا: بے نیاز ہوجانے سے مراد ہے کہ کچھ بھی ہو اس سے کوئی فرق نہیں پڑے گا۔
اس نے مسکراتے ہوئے کہا: یہ تو بے پروائی بھی کہلائی جاسکتی ہے اور بے حسی بھی۔۔ سنو!۔۔سنو!۔۔۔۔ تم بے نیازی کو سمجھنا چاہتے ہو تو پہلے "بے پروائی۔۔۔لاپروائی۔۔بے حسی۔۔اور لاعلمی" ان چاروں کو سمجھو اور سمجھ کے انہیں ایک طرف پھینک دو۔۔۔ تمہیں "بے نیازی" سمجھ میں آجائے گی۔۔کیونکہ بے نیازی میں یہ چار کیفیات بالکل نہیں ہوتی۔ 
میرے دماغ میں روشنی سی چمک اٹھی۔۔میں نے کہا: 
ہاں بالکل۔۔ خدا بے پرواہ نہیں۔۔ کیونکہ وہ انسان سے محبت کرتا ہے۔۔ اور محبت میں بے پروائی نہیں ہوتی۔۔ خدا بے نیاز ہے۔۔ اور اس سے مراد یہ ہے کہ وہ کسی کا محتاج نہیں۔۔ وہ انسان سے محبت کرتا ہے لیکن بدلے میں انسان کے کسی عمل کا وہ محتاج نہیں۔۔ وہ پسند فرماتا ہے کہ انسان اس کی عبادت کرے۔ لیکن اسےعبادت کی ضرورت نہیں۔ وہ عبادت کا محتاج نہیں۔
مگر کیا انسان ایسا بے نیاز ہوسکتا ہے؟ ایسا بے غرض ہوسکتا ہے۔۔ ؟ انسان جو کہ نفس کا غلام ہے۔ خواہشات کا اسیر ہے۔۔خود غرض ہے۔۔۔ اس کی فطرت میں ہے کہ وہ اپنے ہر کام کے بدلے میں "کچھ نہ کچھ" چاہتا ہے۔ ایسا انسان بے نیاز کیسے ہوسکتا ہے؟ اپنی غرض اپنی خواہشات اور اپنے مفاد کو کون چھوڑتا ہے؟ اور پھر خدا رشتوں اور ضروریات کا محتاج نہیں لیکن انسان کے اندر اس نے دو "درد" رکھے ہیں۔۔ ایک اپنا درد۔۔۔ایک دوسروں کا درد۔۔۔ انسان رشتوں کا بھی محتاج ہے اور زندگی گذارنے کے لئے ضروریات کا بھی محتاج ہے۔۔ وہ ان سب سے کیسے بے نیاز ہوسکتا ہے؟ 
اس نے کہا: یہ مشکل ہے۔۔ آسان نہیں ہے لیکن ہوسکتا ہے۔ تمہیں معلوم ہے کہ اللہ کے ولیوں کی سب سے بڑی نشانی کیا ہوتی ہے؟ وہ "مطمئن" ہوتے ہیں۔ طمانیت کے اس مقام پر ہوتے ہیں جہاں اضطراب ان کا کچھ نہیں بگاڑ پاتا۔۔ 
ایک اللہ کے ولی جناب شیخ عبدالقادر کا واقعہ سنو۔۔ وہ وعظ فرمارہے تھے جب اوپر درخت سے ایک سانپ ان پر آگرا۔۔ سننے والے چیختے ہوئے اٹھ کھڑے ہوئے مگر شیخ اپنی جگہ مطمئن بیٹھے تھے۔ 
سانپ ان پر سے سرکتا ہوا نیچے اتر کر سامنے آیا اور بولا: 
میں اپنے اس وار سے بڑے بڑے لوگوں کو آزمایا۔۔ کچھ مجھ سے ڈرے کچھ نہیں ڈرے لیکن آپ جس مقام طمانیت پر ہیں وہاں کسی اور کو نہ پایا۔۔کہ آپ کے ظاہر تو کیا باطن میں بھی ایک زرا جنبش اضطراب پیدا ہوتی نہ دیکھی۔۔
شیخ نے فرمایا: تجھ سے کیا ڈرنا۔۔ دست قدرت میں تو ایک کیڑا ہی تو ہے۔ 
ایک توقف بعد اس نے کہا: یہ واقعہ سچا ہے یا مبالغہ آمیز حد تک جھوٹا۔ لیکن اس کے پیغام کو سمجھو۔۔ اللہ کا ولی مطمئن ہوتا ہے اور وہ اسلئے مطمئن ہوتا ہے کیونکہ وہ "اللہ کی رضا" کو تسلیم کرچکا ہوتا ہے۔ زندگی سے لے کر موت تک۔۔ اور اس بیچ ہر حادثے ہر سانحے اور ہر خوشی وغمی کو اللہ کی رضا مان لینا "طمانیت" عطا کرتا ہے۔ اور یہی طمانیت قائم ہوجائے۔۔تو "بے نیازی" کا سفر شروع ہوتا ہے۔ تم نے صحیح کہا۔۔ خدا رشتوں اور ضروریات کا محتاج نہیں لیکن انسان ہے۔۔۔ لیکن تم نے شروع میں یہ بھی کہا تھا کہ انسان خدا نہیں ہے۔۔ وہ صفت خداوندی کو اس درجہ اپنائے گا جو اس کے اختیار میں ہے۔۔ انسان کی بے نیازی رشتوں اور ضروریات سے بے نیازی نہیں ہے۔۔۔کیونکہ انسان دوسرے انسانوں سے انٹرایکشن کئے بغیر نہیں رہ سکتا۔۔ ایسا کرنے کی کوشش کرے گا تو تنہا ہوجائے گا۔
جبکہ بے نیازی نہ تو انسان کو دوسرے انسان سے دور کرتی ہے اور نہ ہی تنہا۔۔۔ بے نیازی تو بس یہ ہے کہ تمہاری ذات کو آزاد کرنے کا نام ہے۔ "خواہشات۔۔ مفادات۔۔۔اغراض اور محتاجی سے اپنی ذات کو آزاد کردینے کا نام بے نیازی ہے۔۔۔کوئی تم سے محبت کرے یا نفرت کرے۔۔ تمہاری تعریف کرے یا تضحیک کرے۔۔۔ تمہیں اپنا بنائے یا چھوڑ دے۔۔۔ تم دوسروں کے ہر عمل کو "تسلیم" تو کرو۔۔ لیکن ان سے جدا رہو۔۔۔جیسے پانی تیل سے جدا رہتا ہے۔۔۔۔ اور تم یوں جدا رہو کہ کسی کی تعریف تمہیں مغرور نہ کرسکے کسی کی تضحیک تمہیں رلا نہ سکے۔ 
اور یہ وہ مقام ہے جہاں تمہیں ہر احساس "خالص ترین" ملے گا۔۔۔۔کیونکہ اس مقام پر جب تم کسی کے لئے کچھ چاہو گے تو وہ بے غرض ہوگا۔۔ وہ محبت ہو یا نفرت ہو۔۔ اس میں کسی صلے کی خواہش نہ ہوگی۔ کسی شے کی آرزو نہ ہوگی۔۔۔۔تم اپنی زندگی کے جس مقام پر ہو اسے تسلیم کرلو۔۔اور یہ بھی تسلیم کرلو کہ یہاں تم ہمیشہ نہیں رہو گے۔۔زندگی تمہیں لے کر آگے بڑھتی جائے گی۔۔۔۔ تسلیم تمہیں طمانیت دے گی اور طمانیت تمہیں بے نیازی عطا کرے گی۔۔۔ بے نیازی کا مقام ایک ایسی آزادی ہے جہاں تمہیں "آزادی" کا صحیح مفہوم سمجھ میں آئے گا۔


+ http://bit.ly/vucodes (Link for Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution)

+ http://bit.ly/papersvu (Link for Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More)

+ Click Here to Search (Looking For something at vustudents.ning.com?)

+ Click Here To Join (Our facebook study Group)


Views: 272

Comment

You need to be a member of Virtual University of Pakistan to add comments!

Join Virtual University of Pakistan

Comment by Ali Raza on December 22, 2018 at 5:11pm

اس اپلی کیشن میں تمام پاکستانی ٹی وی ڈراموں کو دیکھیں، صرف اس اپلی کیشن فون میں ڈاؤن لوڈ کریں اور اگر آپ ایپ پسند کریں تو ہمیں 5 ستارے دیں

https://play.google.com/store/apps/details?id=com.dotdev.pakistanid...

Comment by ϝ ι ყ α on October 29, 2018 at 5:54pm

zohaib iftikhar 

 Thnkiew sOo much

Comment by ϝ ι ყ α on October 29, 2018 at 5:53pm
Comment by ϝ ι ყ α on October 29, 2018 at 5:52pm

 سروش api yes bt nafss kO maar dena itna asaan kahan

Comment by zohaib iftikhar on October 26, 2018 at 7:38pm

Approved

Comment by zohaib iftikhar on October 26, 2018 at 7:38pm

one of the best

Comment by zohaib iftikhar on October 26, 2018 at 7:38pm

Graet

Comment by + ! ❤SΕNSΙТΙVΕ(∂ΕSΕЯТ ΡЯΙNCΕSS)❤ on October 9, 2018 at 2:31pm

great  

Awlaa  discussion  fiyo  <3

Comment by سروش on August 16, 2018 at 6:42pm

آسان الفاظ میں یہ کہیں کہ اپنا نفس مار دو

توقعات نا بناؤ

یہ عشق نہیں آسان بس اتنا سمجھ لیجئے

اک آگ کا دریا ہے اور ڈوب کے جانا ہے

Latest Activity

Maria liked +M.Tariq Malik's profile
22 minutes ago
Maria left a comment for +M.Tariq Malik
22 minutes ago
Blessings posted a status
"Kya khbr k ab wo khan rehta hai...........................Khush rhe yar jhan rehta hai"
55 minutes ago
SafeerZaidi liked +M.Tariq Malik's group PAK301 Pakistan Studies
1 hour ago
Virtual Educators Academy posted a discussion
1 hour ago
Virtual Educators Academy updated their profile
1 hour ago
Profile IconVirtual Educators Academy, Momna Khalid, Maria and 13 more joined Virtual University of Pakistan
1 hour ago
☆ Tina Solangi ☆ updated their profile
2 hours ago
Humaira Khadim replied to +M.Tariq Malik's discussion PSY404 Abnormal Psychology Assignment 01 Fall 2020 Solution / Discussion in the group PSY404 Abnormal Psychology
2 hours ago
Humaira Khadim replied to +M.Tariq Malik's discussion PSY402 Experimental Psychology Assignment 01 Fall 2020 Solution / Discussion Due Date: 07-12-2020 in the group PSY402 Experimental Psychology
2 hours ago
Ali Fahad posted a discussion
2 hours ago
Kamboh(zaheen o haseen) updated their profile
3 hours ago
Nabila joined +M.Tariq Malik's group
4 hours ago
Mifa Fadel liked +M.Tariq Malik's group SOC101 Introduction to Sociology
4 hours ago
ᴍᴜʙᴀꜱʜɪʀ ♥ updated their profile
4 hours ago
+++!!zυηι кнαη(αм ¢у¢σ) updated their profile
6 hours ago
Mifa Fadel liked +M.Tariq Malik's discussion SOC101 Introduction to Sociology Assignment 01 Fall 2020 Solution / Discussion
10 hours ago
shifa arshad added a discussion to the group CS605 Software Engineering-II
13 hours ago
shifa arshad joined +M.Tariq Malik's group
13 hours ago
Profile Iconиαвєєℓ αнмє∂ and Ali Fahad joined +M.Tariq Malik's group
14 hours ago

© 2020   Created by +M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service

.