We are here with you hands in hands to facilitate your learning & don't appreciate the idea of copying or replicating solutions. Read More>>


Looking For Something at vustudents.ning.com? Click Here to Search

میرا باپ کم نہیں ہے میری ماں سے

                 آج کی پوسٹ اپنے والد کے نام

عزیز تر مجھے رکھتا ہے وہ رگ و جان سے 

یہ بات سچ ہے کہ میرا باپ کم نہیں ہے میری ماں سے

وہ ماں کے کہنے پہ کچھ رعب مجھ پر رکھتا ہے

یہ ہی وجہ ہے کہ وہ مجھے چومتے ہوئے جھجکتا ہے

وہ آشنا میرے ہر کرب سے رہا ہر دم

جو کھل کے رو نہیں پایا مگر سسکتا ہے

جڑی ہے اس کی ہر اک ہاں میری ہاں سے

یہ بات سچ ھے کہ میرا باپ کم نہیں ہے میری ماں سے

ہر اک درد وہ چپ چاپ خود پہ سہتا ہے

تمام عمر سوائے میرے وہ اپنوں سے کٹ کے رہتا ہے

وہ لوٹتا ہے کہیں رات کو دیر گئے،

دن بھر وجود اس کا پسینہ میں ڈھل کر بہتا ہے

گلے رہتے ہیں پھر بھی مجھے ایسے چاک گریبان سے

یہ بات سچ ھے کہ میرا باپ کم نہیں ہے میری ماں سے !

​ پرانا سوٹ پہنتا ہے کم وہ کھاتا ہے ،،،

مگر کھلونے میرے سب وہ خرید کے لاتا ہے !

وہ مجھے سوئے ہوئے دیکھتا رہتا ہے جی بھر کے

نجانے کیا کیا سوچ کر وہ مسکراتا رہتا ہے

میرے بغیر تھے سب خواب اس کے ویران سے

یہ بات سچ ھے کہ میرا باپ کم نہیں ہے میری ماں سے

••══ہ❁༻◉༺❁ہ══••


+ Click Here To Join also Our facebook study Group.


+ Prohibited Content On Site + Report a violation + Report an Issue


..How to Join Subject Study Groups & Get Helping Material?..


See Your Saved Posts Timeline

Views: 47

.

+ http://bit.ly/vucodes (Vu Study Groups By Subject Codes Wise)

Comment

You need to be a member of Virtual University of Pakistan to add comments!

Join Virtual University of Pakistan

Comment by Fari Malik on July 5, 2019 at 10:28pm

nyc

Comment by Alif on July 5, 2019 at 10:00pm

very nice

fari malik u said r8 

safest palce DAD'S arm

Comment by Fari Malik on June 29, 2019 at 10:02pm

Comment by Fari Malik on June 29, 2019 at 9:59pm

waooooooooo

Comment by sanam on June 17, 2019 at 8:33pm

hm sach hi ye

© 2019   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service