We are here with you hands in hands to facilitate your learning & don't appreciate the idea of copying or replicating solutions. Read More>>

Looking For Something at vustudents.ning.com? Click Here to Search

www.bit.ly/vucodes

+ Link For Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution

www.bit.ly/papersvu

+ Link For Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More


Dear Students! Share your Assignments / GDBs / Quizzes files as you receive in your LMS, So it can be discussed/solved timely. Add Discussion

How to Add New Discussion in Study Group ? Step By Step Guide Click Here.

*موہے پیر پایوں نظام الدین اولیا *

*موہے پیر پایوں نظام الدین اولیا *

کہتے ہیں کہ ایک دن ایک سید زادہ حضرت نظام الدین اولیاء کی خدمت میں حاضر ہوا
.
اور عرض کی "یا حضرت میں ایک غریب سید زادہ ہوں اور سر پر جوان بیٹیوں کا بوجھ ہے۔۔ سادات گھرانے کی نسبت ہونے کی وجہ سے زکوٰۃ بھی نہیں لے سکتا۔ آپ میرے دینی بھائی ہیں اور سید بھی ہیں آپ میری مدد کریں کچھ۔"
.
آپ نے اس کو عزت و تکریم کے ساتھ بٹھایا اور خادم سے بلا کر کہا کہ آج کوئی نذر و نیاز آئی خانقاہ میں؟ تو خادم نے عرض کی "سیدی ابھی تک تو کوئی نہیں آئی لیکن جیسے ہی آئی میں آپ کو اطلاع کر دوں گا-"
آپ نے سید زادے کو تسلی دی اور کہا اللہ پہ بھروسہ کرے وہ دست غیب سے کوئی نہ کوئی انتظام فرما دے گامگر تین دن گزر گئے کوئی نیاز نہ آئی سید زادہ بھی مایوس ہوگیا کہ ایویں باتیں مشہور ہیں ان کے بارے میں یہاں تو کوئی مدد ہی نہیں ہو سکی میری-
ایک دن اس نے اجازت طلب کی واپسی کیحضرت محبوب الہیٰ کو بہت دکھ ہوا
کہ مہمان خالی ہاتھ گھر سے جا رہا ہے آپ نے اس کو چند پل کے لیئے روکا
اور اندر سے اپنے نعلین لا کر دے دیئے اور کہا بھائی اس فقیر کے پاس تمھیں دینے کے لیئے اپنے ان جوتوں کے علاوہ کچھ نہیں وہ سید زادہ جوتے لیکر چل پڑا اور سوچنے لگا کہ ان پرانے بوسیدہ جوتوں کا کیا کروں گا حضرت نے اچھا مذاق کیا ہے میرے ساتھ-
دوسری طرف کی سنیئے. . .سلطان محمد تغلق کسی جنگی مہم سے واپس آرہا تھا اور حضرت امیر خسرو جو حضرت نظام الدین اولیا ء کے خلیفہ بھی تھے
سلطان کے ساتھ تھے اور چونکہ آپ ایک قابل قدر شاعر تھے اس لیئے دربار سلطانی میں اہمیت کے حامل تھے_ آپ نے سلطان کی شان میں قصیدہ کہا
تو سلطان نے خوش ہو کر آپ کو سات لاکھ چیتل )سکہ رائج الوقت (سے نوازا
اپنے واپسئ کے سفر پر جب ابھی لشکر سلطانی دہلی سے باہر ہی تھا
اور رات کو پڑاؤ کیا گیا تو اچانک امیر خسرو چلا اٹھے مجھے اپنے مرشد کی خوشبو آتی ہے- مصاحب بولے امیر حضرت محبوب الہیٰ تو کیلوکھڑی میں ہیں جو دہلی سے کافی دور ہے تو آپ کو انکی خوشبو کیسے آ گئی مگر امیر خسرو بے قرار ہوکر باہر نکل پڑے اور خوشبو کا تعاقب کرتے کرتے ایک سرائے تک جا پہنچے- جہاں ایک کمرے میں ایک شخص اپنے سر کے نیچے کچھ رکھ کر سویا ہوا تھا اور خوشبو وہاں سے آ رہی تھی- آپ نے اس کو جگایا اور پوچھا تو حضرت نظام الدین کی خانقاہ سے آ رہے ہو کیا؟ تو وہ آنکھیں ملتا ہوا بولا 'ہاں'
آپ نے اشتیاق سے پوچھا کیسے ہیں میرے مرشد؟ وہ شخص بولا وہ تو ٹھیک ہیں اور میں ان کے پاس مدد کے لیے گیا تھا مگر اور کچھ تو دیا نہیں ہاں اپنے پرانے بوسیدہ جوتے ضرور دیئے ہیں یہ سنتے ہیں امیر خسرو کی حالت غیر ہو گئی اور کہنے لگے کہاں ہیں میرے مرشد کے نعلین ؟
تو اس نے ایک کپڑا کھول کر دکھا دیئے آپ نے ان کو پکڑا چوما اور اپنی آنکھوں سے لگایا اور کہنے لگے کیا تو ان کو بیچے گا؟ اس نے کہا امیر کیوں مذاق اڑاتے ہو امیر خسرو بولے مذاق نہیں میرے پاس اس وقت سات لاکھ چیتل ہیں وہ لے لو مگر میرے مرشد کے نعلین مجھے دے دو اور اگر چاہو تو دہلی چلو اتنی ہی رقم اور دے دوں گا تمھیں- سات لاکھ چیتل کا سن کر وہ چکرا گیا اور بولا نہیں بس میرا تو چند ہزار سے گزارا ہو جائے گا مگر امیر خسرو نے زبردستی اس کو سات لاکھ چیتل دیئے اور ساتھ میں سپاہی اور تحریر دے دی تا کہ کوئی اس پر شک نہ کرے-
اور پھر امیر خسرو اس حالت میں خانقاہ مرشد میں داخل ہوئے کہ جوتے اپنی دستار میں لپیٹ رکھے تھے اور سر پر رکھے بڑھے چلے آ رہے تھے اور زارو قطار رو رہے تھے- حضرت نظام الدین اولیاء نے مسکراتے ہوئے پوچھا
"خسرو ہمارے لیئے کیا لائے ہو؟"
امیر نے جواب دیا سیدی آپ کے نعلین لایا ہوں-
"کتنے میں خریدے؟"
حضرت نظام الدین اولیاء نے استفسار کیا
"سات لاکھ چیتل امیر نے جوابا" عرض کی
"بہت ارزاں لائے ہو۔" محبوب الہیٰ مسکراتے ہوئے بولے-
جی سیدی سات لاکھ چیتل تو بہت کم ہیں اگر وہ سید زادہ میری جان بھی مانگتا تو جان دے کر نعلینِ مرشد حاصل کر لیتا-
یہ تھی ان کی اپنے مرشد سے محبت
اور حضرت نظام الدین اولیاء کا مقام معرفت
جس کی وجہ سے ان کو محبوبِ الہیٰ کہا جاتا ہے!

+ How to Follow the New Added Discussions at Your Mail Address?

+ How to Join Subject Study Groups & Get Helping Material?

+ How to become Top Reputation, Angels, Intellectual, Featured Members & Moderators?

+ VU Students Reserves The Right to Delete Your Profile, If?


See Your Saved Posts Timeline

Views: 21

.

+ http://bit.ly/vucodes (Link for Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution)

+ http://bit.ly/papersvu (Link for Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More)

+ Click Here to Search (Looking For something at vustudents.ning.com?)

+ Click Here To Join (Our facebook study Group)

Comment

You need to be a member of Virtual University of Pakistan to add comments!

Join Virtual University of Pakistan

Latest Activity

Rosetta added 2 discussions to the group SOC101 Introduction to Sociology
2 hours ago
Mani Siddiqui BS VIII posted a status
"مجھے تو کیسے خدا کے سپرد کر رہا ہے؟ میں تیرے ذمہ ہوں تو کہہ رہا ہے خدا حافظ"
2 hours ago
Mani Siddiqui BS VIII posted a status
"یہ دھواں دھواں جو خیال ہیں اسی بات کی تو دلیل ہیں کوئی بات آگ مجھ میں ضرور تھی جسے بے حسی نے بجھا دیا۔۔۔۔۔۔۔"
3 hours ago
Mani Siddiqui BS VIII posted discussions
4 hours ago
Hira rafique joined +M.Tariq Malik's group
4 hours ago
Profile IconMehwish Ghulam Nazik, Silent Boy, Sofia_Khan and 1 more joined Virtual University of Pakistan
4 hours ago
Rana Shoaib liked Mirha's profile
16 hours ago
Laila kabeer commented on +!!!StRaNGeR!!! +'s blog post جاناں
17 hours ago
Laila kabeer replied to Awais's discussion دل کے دشمن کو مہمان کر رکھا ھے
17 hours ago
khan joined +M.Tariq Malik's group
18 hours ago
Mushk liked zohaib iftikhar's blog post ...* MALAIKA KI DUA ...*
18 hours ago
Mushk liked Mani Siddiqui BS VIII's discussion خراب ریاضی
18 hours ago

© 2020   Created by +M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service

.