Latest Activity In Study Groups

Join Your Study Groups

VU Past Papers, MCQs and More

We non-commercial site working hard since 2009 to facilitate learning Read More. We can't keep up without your support. Donate.

جی ہی جی میں جل رہی ہوگی

چاندنی میں ٹہل رہی ہوگی

چاند نے تان لی ہے چادرِ ابر

اب وہ کپڑے بدل رہی ہوگی

سو گئی ہوگی وہ شفق اندام

سبز قندیل جل رہی ہوگی

سرخ اور سبز وادیوں کی طرف

وہ مرے ساتھ چل رہی ہوگی

چڑھتے چڑھتے کسی پہاڑی پر

اب وہ کروٹ بدل رہی ہوگی

پیڑ کی چھال سے رگڑ کھا کر

وہ تنے سے پھسل رہی ہوگی

نیلگوں جھیل ناف تک پہنے

صندلیں جسم مل رہی ہوگی

ہو کے وہ خوابِ عیش سے بیدار

کتنی ہی دیر شل رہی ہوگی.

-جون ایلیا.

Views: 86

Comment

You need to be a member of Virtual University of Pakistan to add comments!

Join Virtual University of Pakistan

Looking For Something? Search Below

Top Trends 

Latest Activity

© 2022   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service