Latest Activity In Study Groups

Join Your Study Groups

VU Past Papers, MCQs and More

اپنے لیے جینا سیکھو (A page from diary)

اس کائنات محبت میں ہم مثل شمس و قمر کے ہیں

اک رابطہ مسلسل ہے، اک فاصلہ مسلسل ہے

عمیرہ احمد

زندگی ایک ایسا ساراب ہے جسنے ہر ایک کو اپنے دھوکے میں ڈال رکھا ہے ہر ایک پاگلوں کی طرح اسکے پیچھے بھاگے جارھا ہے جیسے کوئی مقابلہ کی دوڑ ہو

 مست ہورھا ہے ہر کوئ کون سمجھائے یہ کیسی بیگانگی

ے؟   

اپنی زندگی میں ایسے بہت سے مواقع آتے ہیں جب ہر اپنا آپکو بیگانہ لگتا ہے آپ سے نفرت کی جاتی ہے دھتکارا جاتا ہے 

بس آپ اپنا آپ اک جگہ مرکوز رکھیں اپنے مقصد پر ڈٹے رہیں لوگ آپ کو سلواتے سنائیں کچھ بھی کھیں آپ اپنے راستے پر گامزن رہیں جانتے ہیں لوگوں کی باتیں وہ پتھر ہیں جنکو آپ خود پر لادنے کے بجائے ایسا راستا بنا سکتے ہیں کہ جو آپ کو منزل تک پہنچا دے

کہتے ہیں جب تک آواز نہ اٹھائ جائےتبتک تبدیلی نہیں آتی آپنے حق کے لیے بولیں آواز اٹھائیں 

پھر وہ جو آپ پر بولا کرتے تھے آپ کے ساتھ بولیں گے 

Views: 192

Comment

You need to be a member of Virtual University of Pakistan to add comments!

Join Virtual University of Pakistan

Comment by 彡JK彡 ❤️ on September 26, 2020 at 9:41am

................

Comment by 彡JK彡 ❤️ on April 10, 2019 at 9:54pm

Hahahahahaha DD

lolzz hogyaaa! 

Comment by +! ! ! ! ! dixie dust on April 9, 2019 at 2:14pm

haaaaan jerri apko to wesy awaax uthany ky lye ksi speaker k b xroorat bh nhi prniiiapka apna speaker kafi h 

Comment by 彡JK彡 ❤️ on April 4, 2019 at 6:45am

datOo..... Q nahii merii zindagii aik misaal hai logon k lia.... HOw um carrying my life etc. 

Comment by 2.O on April 3, 2019 at 10:08pm

dadi kabhi koi practical bhi kiya hay kay sirf pages hi barti rahti hoo

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service