Latest Activity In Study Groups

Join Your Study Groups

VU Past Papers, MCQs and More

We non-commercial site working hard since 2009 to facilitate learning Read More. We can't keep up without your support. Donate.

♥♥Allama Muhammad Iqbal Ki Hazir Jawabi♥♥

ایک دفعہ کسی کالج کے چند طالب علموں نے علامہ اقبال کو اپنے کسی جلسہ میں شرکت کی دعوت دی، علامہ اقبال نوجوانوں کی حوصلہ افزائی کے لیے تشریف لے گئے۔
دوران جلسہ چند شوخ قسم کے لڑکوں نے ان کو چھیڑنے کی غرض سے کہا:
“علامہ صاحب! ایک مصرعہ ھے، اگر آپ دوسرا مصرع موزوِں کریں تو ھم جانیں!“
علامہ اقبال مسکرائے اور کہا: “اچھا مصرعہ بتاؤ!“
ایک طالب علم نے مصرعہ سنایا:
؎“مچھلیاں دشت میں پیدا ہوں ، ہرن پانی میں“۔
مصرعہ بانجھ تھا، اس پر گرہ لگانا ممکن نہ تھا کیونکہ مچھلیاں کبھی دشت )صحراء( میں اور ہرن پانی میں پیدا ہو ہی نہیں سکتے۔
اور نوجوانوں کا مقصد بھی یہی تھا کہ علامہ جب گرہ نہ لگا پائینگے تو انکی سبکی ہوگی۔
لیکن
اقبال نے بلا توقف شعر یوں مکمل کیا:
“دشت اشکوں سے بھریں، آہ سے سوکھیں دریا
مچھلیاں دشت میں پیدا ہوں، ہرن پانی میں“
یہ شعر سن کر لڑکوں سمیت حاضرین محفل لا جواب ھو گئے

Views: 139

Comment

You need to be a member of Virtual University of Pakistan to add comments!

Join Virtual University of Pakistan

Looking For Something? Search Below

VIP Member Badge & Others

How to Get This Badge at Your Profile DP

------------------------------------

Management: Admins ::: Moderators

Other Awards Badges List Moderators Group

© 2021   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service