We have been working very hard since 2009 to facilitate in your learning Read More. We can't keep up without your support. Donate Now.

www.bit.ly/vucodes

+ Link For Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution

www.bit.ly/papersvu

+ Link For Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ

آج کی تراویح

محمد احمد وصفی
- یہ بیان چوتھے پارے کے ربع آخر سے پانچویں پارے کے اختتام تک کی تلاوت پر مشتمل ہے۔ اللہ تعالیٰ کا ارشاد ہے کہ ’’جب تک افواہوں کی تحقیقات کرکے حقیقت معلوم نہ کرلی جائے اُس وقت تک ان کی اشاعت کو روکا جائے کیونکہ منافقین غلط افواہیں پھیلا کر مسلمانوں کو ہراساں کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔‘‘ مسلمانوں کو یہ ہدایت دی گئی ہے کہ اپنے کردار اور اخلاقی سطح کو بلند رکھو تاکہ کفار کے مقابلے میں تم کو باوجود اپنی قلیل تعداد کے کامیابی حاصل ہو۔ چنانچہ یہودیوں‘ عیسائیوں اور مشرکوں کے مذہبی تعصبات اور مذموم اخلاق و عمل پر بھی تنقید کی گئی ہے اور ان کو دینِ حق کی طرف دعوت دی گئی ہے۔ ارشادِ باری تعالیٰ ہے کہ ’’تم سب آدم ؑکی اولاد ہو‘ اس لیے معاشرے کو مت بگاڑو۔‘‘ حکم ہوا کہ ’’یتیموں کا مال ان کو واپس کردو اور ان کے اچھے مال سے اپنا برا مال مت بدلو۔‘‘ اس سورۃ میں تیمّم کی اجازت بھی دی گئی ہے اور نماز قصر کرنے‘ نیز نماز خوف ادا کرنے کا حکم بھی دیا گیا ہے۔ پھر ازواج کی تعداد مقرر فرماتے ہوئے یہ ارشاد فرمایا گیا ہے کہ ’’اگر تم بیویوں کے درمیان انصاف نہ کرسکو تو پھر ایک ہی بیوی پر اکتفا کرو اور بیویوں کے مہر خوش دلی سے ادا کرو۔‘‘ ترکے میں مرد اور عورت کے حصے مقرر فرمائے اور قرض کی ادائیگی کو مقدم ٹھہرایا۔ بدکار عورت پر چار شہادتوں کو لازمی قرار دیا اور جرم ثابت ہونے پر قید میں رکھنے کا حکم ہوا۔ بدکار مرد کے لیے سخت سزا کا حکم ہوا۔ البتہ توبہ کی تاکید فرمائی۔ ہاں‘ آخری وقت کی توبہ قابلِ قبول نہیں۔ اس کے بعد ان رشتوں کی تفصیل ہے جن سے نکاح ناجائز ہے۔ مقررہ مہر کی رقم میں زوجین کی رضامندی سے شادی کے بعد کمی بیشی ہوسکتی ہے‘ متعہ محض شہوت رانی ہے‘ اس لیے حرام ہے۔ تجارت میں باہمی رضامندی سے مناسب منافع جائز ہے لیکن ظلم اور ہیراپھیری ناجائز ہے جس کی سزا جہنم ہے۔ بڑے گناہوں سے بچنے کی کوشش سے چھوٹے گناہ شرطِ توبہ معاف ہوجاتے ہیں۔ عورتیں اگر نافرمان اور قابو سے باہر ہوں تو ان کو سزا دی جاسکتی ہے‘ لیکن سزا دینے کا بہانہ تلاش کرنا سخت گناہ ہے۔ زوجین میں اگر ناراضی ہوجائے اور باہم فیصلہ نہ ہوسکے تو ثالث مقرر کیا جاسکتا ہے۔ بخیل اور ناشکرے لوگوں کے لیے ذلت کا عذاب ہے۔ نشے اور ناپاکی کی حالت میں نماز ناجائز ہے۔ پانی میسر نہ ہونے کی صورت میں غسلِ ناپاکی اور وضوکے بدلے تیمّم جائز ہے۔ مسلمانوں کو امانتیں واپس کرنے‘ انصاف کرنے اور خیانت نہ کرنے کی تلقین فرمائی گئی‘ جہاد کا حکم دیا گیا اور شہادت کا مرتبہ بہت بلند اور اعلیٰ رکھا گیا۔ مسلمانوں کے لیے موت سے ڈرنا بزدلی ہے۔ مسلمانوں کو جہاد کا حکم دیا گیا اور گواہی سیدھے اور صاف الفاظ میں دینا چاہیے۔ پیچ دار گواہی ناجائز ہے۔ یہاں تک کہ اگر سچی گواہی کے مضر اثرات تمہاری ذات پریا اپنے رشتہ دار کی ذات پر بھی پڑتے ہوں تب بھی گواہی سچی دینی چاہیے۔ ارشادِ باری تعالیٰ ہے کہ ’’شرک کو ہرگز معاف نہیں کیا جائے گا اور لغزشیں اس کی رحمت سے معاف ہوسکتی ہیں۔‘‘


+ http://bit.ly/vucodes (Link for Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution)

+ http://bit.ly/papersvu (Link for Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More)

+ Click Here to Search (Looking For something at vustudents.ning.com?)

+ Click Here To Join (Our facebook study Group)


Views: 110

Comment

You need to be a member of Virtual University of Pakistan to add comments!

Join Virtual University of Pakistan

Comment by sHaZiM on July 27, 2012 at 8:22pm

MASHAALLAHA

Looking For Something? Search Here

Today Top Members 

HELP SUPPORT

This is a member-supported website. Your contribution is greatly appreciated!

© 2020   Created by +M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service

.