We are here with you hands in hands to facilitate your learning & don't appreciate the idea of copying or replicating solutions. Read More>>

Looking For Something at vustudents.ning.com? Click Here to Search

www.bit.ly/vucodes

+ Link For Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution

www.bit.ly/papersvu

+ Link For Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More


Dear Students! Share your Assignments / GDBs / Quizzes files as you receive in your LMS, So it can be discussed/solved timely. Add Discussion

How to Add New Discussion in Study Group ? Step By Step Guide Click Here.

زندگی خوابوں کے سہارے نہیں گزرتی۔ اس تلخ حقیقت کا احساس تو اسی دن ہو گیا تھا جب یونیورسٹی سے سند حاصل کیے ہوئے ایک ماہ گزر چکا تھا۔ ہردن ایک نئی امید کا طلو ع ہوتا تھا مگر رات کے اندھیروں کی طرح خوفزدہ کرتا ہوا غروب ہوجاتا تھا۔ دن گزر گزر کر ماہ و سال کے روپ دھارتے چلے جا رہے تھے مگر دل اب بھی خوشیوں سے انجان تھا ۔ واپس خالی ہاتھ اور تھکے قدموں سے گھر آتے ہوئے ہزاروں وسوسے اور پریشانیاں دل میں لیے خالد نے گھر میں قدم رکھا ہی تھا کہ سب سے زیادہ پریشان کرنے والے سوال نے اس کے قدم دروازے پر ہی روک لیے تھے۔ بھابھی کی آواز کانوں میں صور پھونک رہی تھی۔

اماں اب اس سے آخری بات کرنی ہوگی ۔ میرا خاوند کما کما کر تھک جاتا ہے اور تمھارے لاڈلے کی عیاشیاں ہی ختم ہونے کا نام نہیں لے رہیں ۔ ارے میں کہتی ہوں اماں تمھارے لاڈ پیار نے ہی اس کو کام کا نہ کاج کا دشمن انا ج کا بنا دیا ہے۔ کب تک بیٹھا میرے خاوند کی کمائی پر عیش کرے گا ۔ ارے ہمارے بھی تو بچے ہیں ہمیں ان کو بھی تو دیکھنا ہے یا اب اس پلے ہوئے سانڈ پر ہی ساری کمائی لگانی ہوگی کیا“۔”میں کیا کرسکتی ہوں کہہ کہہ کر تھک گئی ہوںاس نگھوڑ مارے کو مگر پتہ نہیں کونسی دوستیاں لے کر بیٹھ گئی ہیں اسے۔ ایک سال ہونے کو آیا ہے مگر اب تک نوابزادے کو کوئی نوکری ہی پسند نہیں آئی۔ سمجھا سمجھا کر تھک گئی ہوں چھوٹی موٹی نوکری سے شروعات کر لے مگر وہ تو جیسے سمجھتا ہے کہ ابا نے پیدا ہوتے ہی منہ میں سونے کا نوالہ دے دیا تھا“۔ اماں بھی جیسے دل کے سارے شکوے نکالنے کو تیار بیٹھی تھی۔”آہ۔۔۔۔کاش مجھ سے بھی تو کوئی پوچھے کہ میں کیا کیا کوشش نہیں کر چکا ہوں مگر ہر جگہ دھکوں کے سوا کوئی جواب نہیں ملا“۔ خالد دل میں سوچ رہا تھا۔ اس کے گھر کی دہلیز کو پار کرنے والے قدم پیچھے ہٹ گئے۔ اس کا گھر جانے کو اب دل نہیں چاہ رہا تھا۔ پریشان سوچیں لیے وہ چلتا جا رہا تھا ۔ فاصلے بھی اب اس کے لیے اجنبی بن چکے تھے اور ہر منزل بے نام ہوچکی تھی ۔اپنے دل میں ہر خواب کو قدموں تلے کچلتا ہوا وہ آنکھوں میں نمی لیے ہر احساس کو روندتا ہوا احساس کے رشتوں سے دور جا تا جا رہا تھا۔ آنکھوں میں آئی نمی ہر ان ادھورے سوالات کا جواب دے رہی تھی جو پچھلے ایک سال میں اس کی روح کو کچوکے لگا کر مردہ کر چکے تھے۔ ”اماں میں تو ہر چھوٹی سے چھوٹی نوکری کے لیے بھی منتیں کر چکا ہوں اور بھابھی ایک سال سے تو میں نے پیٹ بھر کر کھانا تو دور کی بات میں نے تواپنی سب خواہشات ہی اپنے ہاتھوں دفن کر دیں تھیں کہ تمھارے خاوند کی کمائی پر تمھارے بچوں کا حق تھا۔یہ ڈگڑیاں اور تعلیمی قابلیت نوکری کا معیار نہیں ہیں اماں۔کیسے بتاﺅں کہ اپنے خرچ کے لیے کیسے کیسے مزدوری تک کی ہے تاکہ بھابھی تمھارے خاوند کی کمائی کے لیے ہاتھ نہ پھیلانے پڑیں مگر شائد زندگی پر ان لوگوں کا حق نہیں ہوتا جو وقت سے پہلے ہی خواب بن لیتے ہیں اور سکون کو اپنا آشیانہ بنا لیتے ہیںاور میری طرح بھول جاتے ہیں کہ زندگی تو غم کا نام ہے جو رولا کر ہی خوش رہتی ہے“۔ آنسو ایک ایک کر کے گررہے تھے مگر اس کے خاموش جواب زندگی بھی سن کر مسکرا رہی تھی ۔ ایسے میں اس کی حالت پر موت کو ہی شائد ترس آچکا تھا اس وجہ سے ایک تیز رفتار ٹرک اس کو زرور دار ٹکڑ مارتا ہوا اندھیروں میں غائب ہو چکا تھا۔ اس کی مردہ کھلی آنکھوں میں اس کے کچلے خواب بھی موت کے سناٹے کو پا کر مسکرا اٹھے تھے اور اس کی قابلیت کی وہ فائل جو اس کو نوکری دلانے کے لیے ناکافی تھی اس کا ورق ورق ہوا میں بکھر کر فائل کے بندھن سے آزاد ہو چکا تھا شائد کسی چھاپڑی یا ریڑھی والے کے چولہے کا ایندھن بننے کے لیے۔




+ How to Follow the New Added Discussions at Your Mail Address?

+ How to Join Subject Study Groups & Get Helping Material?

+ How to become Top Reputation, Angels, Intellectual, Featured Members & Moderators?

+ VU Students Reserves The Right to Delete Your Profile, If?


See Your Saved Posts Timeline

Views: 403

.

+ http://bit.ly/vucodes (Link for Assignments, GDBs & Online Quizzes Solution)

+ http://bit.ly/papersvu (Link for Past Papers, Solved MCQs, Short Notes & More)

+ Click Here to Search (Looking For something at vustudents.ning.com?)

+ Click Here To Join (Our facebook study Group)

Comment

You need to be a member of Virtual University of Pakistan to add comments!

Join Virtual University of Pakistan

Comment by ✿❤ Nabila ❤✿ on September 23, 2014 at 10:40pm

Thanks Zohaib

Comment by zohaib iftikhar on September 23, 2014 at 10:17pm

nice Nabila g

Comment by ✿❤ Nabila ❤✿ on September 23, 2014 at 7:31pm

Comment by ✿❤ Nabila ❤✿ on September 23, 2014 at 7:31pm

Thanks  zohaib iftikhar

Comment by zohaib iftikhar on September 23, 2014 at 3:24pm

THANKS

Comment by zohaib iftikhar on September 23, 2014 at 3:24pm

NICE SHARING

Comment by zohaib iftikhar on September 23, 2014 at 3:23pm

RIZQ US ZAT KI ATA HAI WO KABHI AP KO ZAYA NAHI KARY GA

Comment by zohaib iftikhar on September 23, 2014 at 3:23pm

PARH K SACH MA ANKHO MA NAMI AA GAI

Comment by ✿❤ Nabila ❤✿ on September 22, 2014 at 10:43pm

Comment by ✿❤ Nabila ❤✿ on September 22, 2014 at 10:43pm

yup its very true fact 

© 2020   Created by + M.Tariq Malik.   Powered by

Promote Us  |  Report an Issue  |  Privacy Policy  |  Terms of Service

.